جدید ہیلی کاپٹرز، میزائلوں کی فراہمی سے پاکستان کی دہشت گردی کیخلاف صلاحیت بڑھے گی: امریکہ

جدید ہیلی کاپٹرز، میزائلوں کی فراہمی سے پاکستان کی دہشت گردی کیخلاف صلاحیت بڑھے گی: امریکہ

واشنگٹن (نمائندہ خصوصی) امریکہ نے پاکستان کے ساتھ قریباً ایک ارب ڈالر کے جدید اسلحہ کی فراہمی کے مجوزہ معاہدے کا دفاع کرتے ہوئے کہا ہے کہ جدید ترین اٹیک ہیلی کاپٹروں اور میزائلوں کی فراہمی سے پاکستان کی انسداد دہشت گردی کی صلاحیت میں اضافہ ہوگا۔ امریکی محکمہ خارجہ کی قائم مقام ترجمان میری ہارف نے روزانہ کی معمول کی پریس بریفنگ میں کہاکہ ہیلی کاپٹروں اور دیگر ہتھیاروں کانظام مکمل فوجی صلاحیتوں کے ساتھ پاکستان کو فراہم کیا جائیگا جوداخلی طور پر دہشت گردی کیخلاف آپریشنز میں استعمال ہوگا۔ انہوں نے یہ بات پاکستان کو 953 ملین ڈالر کے ہیل فائٹر میزائل اور ہیلی کاپٹروں کی مجوزہ فراہمی کے حوالے سے صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے بتائی۔ اوباما انتظامیہ کانگرس کو اس فروخت کے حوالے سے اطلاع دے رہی ہے۔ میری ہارف نے کہا کہ ہمارے پاکستان کے ساتھ اچھے مقاصد کیلئے انسداد دہشت گردی کے حوالے سے بڑے قریبی تعلقات ہیں۔ پاکستان کو دہشت گردی کے حوالے سے ابھی بڑے مسائل کا سامنا ہے اسی لئے ہم اسکی مدد کررہے ہیں۔ اسکا ہماری قومی سلامتی کے مفادات سے بھی تعلق ہے۔ پاکستان نے 15AH-1Z وائیپر اٹیک ہیلی کاپٹر 32-T-700 جی ای 401 سی انجن (30 انسٹال اور 2 فالتو) 1000 AGM-114R ہیل فائٹرII میزائل (کنٹینرز میں) 36H-1 ٹیکنیکل ریفریش مشن کمپیوٹرز اور دیگر دفاعی آلات مانگے ہیں۔ اسکے ساتھ پاکستان نے پریسیزن سٹرائیک انہانسڈ سروائیویبلیٹی طیارہ بھی مانگا ہے جو بلندی کی پرواز کے کام آئیگا۔