بان کی مون کا یمن میں سیاسی مذاکرات شروع کرنے پر زور

بان کی مون کا یمن میں سیاسی مذاکرات شروع کرنے پر زور

اقوام متحدہ (اے ایف پی+نمائندہ خصوصی) اقوام متحدہ کے سیکرٹری جنرل بان کی مون نے یمن میں سیاسی بات چیت شروع کرنے پر زور دیتے ہوئے کہا ہے کہ دنیا کو لیبیا اور شام کی طرح مزید افراتفری نہیں چاہئے۔ صحافیوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا سیاسی مذاکرات کی جانب واپسی ضروری ہے۔ اقوام متحدہ نے کہا ہے کہ یمن کی موجودہ صورتحال میں یہاں بڑے پیمانے پر لوگوں کے بے گھر ہونے کا خدشہ ہے۔ اندرون ملک بے گھر ہونے والے افراد کے حقوق بارے اقوام متحدہ کی خصوصی مندوب چالوکا بیانی کی طرف سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ عالمی برادری اس صورتحال سے نمٹنے کے لئے تیار رہے۔ کیونکہ اگرچہ یمن کے بحران کے سفارتی حل کی کوششےں جاری ہیں۔ اس کے باوجود وہاں کی صورتحال تیزی سے خراب ہو رہی ہے اور لوگوں کی بڑی تعداد جنگ زدہ علاقوں میں اپنے گھر بار چھوڑنے پر مجبور ہو رہی ہے۔ اقوام متحدہ کے مختلف ادارون کی رپورٹس کے مطابق یمن کے بحران میں اب تک سینکڑوں افراد کے ہلاک و زخمی ہونے کے ساتھ ساتھ بے گھر ہونے والوں کی تعداد ایک لاکھ تک پہنچ چکی ہے ہزاروں افراد کو بجلی و پانی کی فراہمی معطل ہو چکی ہے اور وہ سخت مشکلات کا شکار ہیں۔ یمن میں جاری صورتحال سے متاثر ہونے والے بچوں اور عام شہریوں کی تعداد سب سے زیادہ ہے۔