ملائیشین ائرلائنز کا طیارہ تباہ‘ غیر ملکیوں سمیت 239 مسافر ہلاک

ملائیشین ائرلائنز کا طیارہ تباہ‘ غیر ملکیوں سمیت 239 مسافر ہلاک

کوالالمپور + بیجنگ (این این آئی+رائٹرز) ملائیشیا کے دارالحکومت کوالالمپور سے چین کے شہر بیجنگ جانے والا مسافر طیارہ سمندر میں گر کر تباہ ہو گیا۔ ملائیشین ائر لائنز کمپنی کے مطابق اس بوئنگ 777 طیارے پر دو شیرخوار بچوں سمیت 227 مسافر اور عملے کے 12 ارکان سوار تھے۔ ملائیشیا ائر لائن کی جانب سے جاری ہونے والے بیان میں کہا گیا  کہ ایم ایچ 370 نامی پرواز جمعہ اور ہفتہ کی درمیانی شب دو بجکر 40 منٹ پر کوالالمپور کے ہوائی اڈے سے اڑی تھی اور اسے مقامی وقت کے مطابق صبح ساڑھے چھ بجے بیجنگ پہنچنا تھا۔ کمپنی کے مطابق پرواز کے دو گھنٹے بعد طیارے کا رابطہ ائر ٹریفک کنٹرول سے منقطع ہو گیا  لاپتہ ہونے والا طیارہ سمندر میں گر کر تباہ ہو گیا۔ ادھر چین کے سرکاری ٹی وی کا کہنا ہے کہ لاپتہ ہونے والے طیارے پر سوار مسافروں میں سے 160 چینی شہری ہیں۔چینی میڈیا کے مطابق لاپتہ ہونے والے طیارے سے ریڈار کا رابطہ ممکنہ طور پر ویتنام کی فضائی حدود میں منقطع ہوا۔ مذکورہ طیارہ چین کی فضائی حدود میں داخل ہی نہیں ہوا اور نہ ہی اس کے عملے نے چینی ائر ٹریفک کنٹرول سے رابطہ کیا۔ غیر ملکی خبررساں ایجنسی کے مطابق ویتنام کی بحریہ کے حکام نے اس بات کی تصدیق کی ہے کہ ائر لائن کی پرواز ایم ایچ 370 ویتنام کے جنوبی جزیرے فو کوک میں سمندر میں گر کر تباہ ہو گئی ہے۔طیارے میں چینی باشندوں سمیت، ملائیشیاکے 38 ، انڈونیشیا 7، آسٹریلیا کے 6 ، پانچ بھارتی، فرانس کے 4 باشندے، 3 امریکی، ایک ، ایک چینی اور امریکہ بچہ ہلاک ہونے والوں میں شامل ہیں۔اے پی اے کے مطابق ملائشین وزیر اعظم نجیب رزاق نے اظہارتعزیت کرتے ہوئے ایمرجنسی ہیلپ لائن کا اعلان کیا، اقوام متحدہ کے جنرل سیکرٹری بان کی مون امریکہ، برطانیہ سمیت دیگر ممالک کے سربراہان نے حادثے پر اظہار افسوس کیا ہے۔ نیوزی لینڈ، یوکرائن، کینیڈا، روس، اٹلی، تائیوا، ہالینڈ اور آسٹریا کے شہری بھی مارے گئے۔ذرائع کے مطابق سمندر پر تیل کی  لہر  نظرآئی ہے جس کے سبب حادثے کے خدشات بڑھ گئے‘ طیارے کے  ملبے کے بعض حصے مل گئے ہیں



طیارہ تباہ