پورا بھارت کشمیریوں کے لئے موت کا پھندا ثابت ہو رہا ہے: سید علی گیلانی

سرینگر (کے پی آئی) کل جماعتی حریت کانفرنس گ کے چیرمین  سید علی گیلانی  نے ایک سال قبل ممبئی میں ہلاک کئے گئے نوجوان کی موت کے بارے میں ہوئے نئے انکشاف پر اپنی حیرت اور افسوس کا اظہار کرتے ہوئے اس کے قاتلوں کو فوری طور پر گرفتار کرنے پر زور دیا ہے۔ انہوں نے کہا کہ ہم نے اُسی وقت خدشہ ظاہر کیا تھا کہ پرویز احمد کی موت کوئی حادثہ نہیں بلکہ ایک قتل ہے، البتہ ریاستی انتظامیہ نے اس قتل کے معاملے میں غفلت شعاری اور غیر ذمہ داری کا ثبوت دیا اور اس سلسلے میں لواحقین کی کسی قسم کی کوئی مدد نہیں کی گئی۔ اخبارات کے لیے جاری بیان میں آزادی پسند راہنما نے کہا کہ پورا بھارت کشمیریوں کے لیے موت کا  پھندا ثابت ہورہا ہے اور اس ملک کے کسی بھی کونے میں کشمیری محفوظ نہیں ہیں۔ انہیں ہر جگہ شک کی نگاہ سے دیکھا جاتا ہے اور ان کی تذلیل اور تحقیر کی جاتی ہے۔ حریت چیئرمین نے ریاستی انتظامیہ کی اس بات کے لیے کڑی نکتہ چینی کی کہ ان حکمرانوں کو صرف اپنی کرسیوں سے مطلب ہے اور انہوں نے بھارت میں مقیم کشمیری نوجوانوں کی ہلاکتوں اور گرفتاریوں کا آج تک کوئی سنجیدہ نوٹس نہیں لیا ہے۔ عمر عبداﷲ نے اگرچہ کئی بار یہ یقین دہانی کرائی کہ اب بھارت کی کسی بھی ریاست میں کشمیریوں کو تنگ نہیں کیا جائے گا، البتہ یہ اعلان محض دھوکہ ثابت ہوا۔