عراق : داعش نے 200 برس قبل آباد کئے گئے شہر ’’ہترہ‘‘ کو بھی تباہ کرنا شروع کر دیا

عراق : داعش نے 200 برس قبل آباد کئے گئے شہر ’’ہترہ‘‘ کو بھی تباہ کرنا شروع کر دیا

بغداد (بی بی سی) شمالی عراق میں موجود کرد ذرائع کے مطابق داعش نے قدیم شہر نمرود کے بعد اب اس کے قریب واقع ہترہ نامی شہر کو تباہ کرنا شروع کر دیا ہے۔ طویل قامت دیواروں کے ساتھ ہترہ شہر کو قدیم یونانی دور میں آج سے تقریباً دو ہزار سال پہلے آباد کیا گیا تھا۔ اسے اس دور کے عمدہ شہروں کی فہرست میں بطور مثال شمار کیا جاتا ہے۔ نمرود کے کھنڈرات کا شمار عراق کے اہم ترین آثار قدیمہ میں ہوتا ہے۔ نمرود نامی شہر 13 ویں صدی قبل مسیح میں موصل کے نزدیک دریائے دجلہ کے کنارے بسایا گیا تھا۔ عراقی آثار قدیمہ کے ماہر لامیہ الگیلانی کا کہنا ہے کہ وہ ہماری تاریخ مٹا رہے ہیں۔