امن کوششوں کے دوران سماجی آزادیوں پر سمجھوتہ نہیں کرینگے: اشرف غنی

کابل(رائٹرز) افغان صدر اشرف غنی نے کہا ہے کہ افغانستان میں طالبان حکومت کے بعد 13 سال میں متعارف کروائی گئی سماجی آزادیوں پر سمجھوتہ نہیںکیا جائے گا اور وہ اس طویل لڑائی کو ختم کرنے کیلئے طالبان کے ساتھ امن مذاکرات کا آغاز کررہے ہیں۔ پارلیمنٹ سے خطاب کرتے ہوئے انہوں نے کہا کہ ہم امن کی قیمت جنگ کی قیمت سے زیادہ بڑی نہیں ہونے دینگے اور 13 سال میں سابق صدر کرزئی کی سربراہی میں حاصل ہونے والی کامیابیوں کا تحفظ کرینگے۔ انہوں نے ان کامیابیوں کا تعین نہیں کیا مگر اس سے ان کی مراد بظاہر خواتین کو حاصل ہونیوالے حقوق اور آزادی اظہار رائے کے حقوق تھے۔ ان کا یہ بیان پاکستان اور افغانستان میں موجود رہنمائوں کی جانب سے طالبان اور افغان حکومت کے مابین مذاکرات کے اعلان کے دو ہفتے بعد سامنے آیا ہے۔