مقبوضہ کشمیر : ترنگا لہرانے کی کوشش ناکام ، 9 گرفتار : پاکستان ، بھارت مذاکرات کریں : اقوام متحدہ

سرینگر (اے این این+ آن لائن)مقبوضہ کشمیر میں ڈاکٹر فاروق عبداللہ کے چیلنج کو قبول کر تے ہوئے بھارت کی ہندو انتہا پسند تنظیم بجرنگ دل اور شیو سینا کے کارندوں نے سرینگر میں بھارتی ترنگا لہرانے کی ناکام کو شش کی اور پولیس نے انتشار پھیلانے والے 9کارندوں کو گرفتار کر لیا جبکہ دو مختلف حادثات میں پولیس اہلکار اور خاتون سمیت 3افراد ہلاک ہو گئے،شوپیاں میں بھارتی فوجی کے قتل کے الزام میں ایک نوجوان گرفتار، بھارتی فورسز کے مظالم کیخلاف احتجاج کا سلسلہ گزشتہ روز بھی جاری رہا،بھارتی فورسز پر پتھراؤ،اہلکاروں کی فائرنگ اور پیلٹ لگنے سے 5افراد زخمی ہو گئے۔ تفصیلات کے مطابق چند روز قبل مقبوضہ کشمیر میں اپوزیشن جماعت نیشنل کانفرنس کے سربراہ ڈاکٹر فاروق عبداللہ نے بھارتی کو کہا تھا کہ وہ آزاد کشمیر کے خواب دیکھنے سے پہلے مقبوضہ کشمیر میں بھارتی ترنگا لہرا کر دکھائے اس بات کو بھارت کی ہندو انتہا پسند تنظیموں نے اپنے لئے چیلنج سمجھ لیا اور اور گزشتہ روز شیو سینا اور بجرنگ دل کا 9رکنی گروپ علی الصبح ریگل چوک میں واقع سٹیٹ بینک آف انڈیا ہیڈکوارٹر کے باہر نمودار ہوا اور شیوسینا زندہ باد، ہندوستان زندہ باد، بھارت ماتا کی جے اور وندے ماترم کے نعرے لگاتے ہوئے تاریخی لال چوک پہنچ گیا۔ نقص امن کے خدشے کے پیش نظر 9شیو سینا کارکنوں کو ترنگا لہرانے سے قبل ہی گھنٹہ گھر کے بالکل نزدیک حفاظتی تحویل میں لیا گیا۔ کل جماعتی حریت کانفرنس کے چئیر مین میر واعظ عمر فاروق نے جموںوکشمیر کی تازہ ترین صورتحال کو انتہائی پریشان کن قرار دیتے ہوئے کہا ہے کہ دنیا کے سب سے بڑے فوجی جمائو والے اس خطے میں گزشتہ تقریباً تین دہائیوں سے قتل و غارت گری ، مار دھاڑاور بنیادی انسانی حقوق کی پامالیاں پورے تسلسل کے ساتھ جاری ہے اور حکومت ہند کشمیریوں کی اپنی جدوجہد اور تحریک کو طاقت کے وحشیانہ استعمال سے کچلنے کیلئے وہ تمام حربے استعمال کررہی ہے۔حریت قائدین نے کہا بھارتی ایجنسیاں حریت قیادت کا اتحاد توڑنے کے لئے متحرک ہو چکی ہیں، عوام ہوشیار رہیں۔

کشمیر

نیویارک (آن لائن) امریکہ اور اقوام متحدہ نے کشمیر کے موجودہ حالات پرتشویش کااظہارکی کرتے ہوے کہا ہے کہ پائیدار دوستی کیلئے پاکستان اور بھارت کو مذاکرات کی راہ بحا ل کرنی ہو گی ۔ بھارتی میڈیاس کے مطابق امریکی محکمہ خارجہ کے ترجمان نے اپنے ایک بیان میں کہا کہ دونوں ممالک کے درمیان مذاکرات کی بحالی وقت کی اہم ترین ضرورت ہے اور امریکہ اس سلسلے میں کوششیں جاری رکھے گا کہ دونوں ممالک کے درمیان مذاکرات کا سلسلہ پھر بحال ہو۔کشمیر میں تشدد روکنے کے حوالے سے ترجمان کا کہنا تھا کہ اس مسئلے کی جانب سے توجہ دینا ہوگی اوراس جہاں کہیں بھی تشدد آمیز واقعات رونما ہوتے ہوں امریکہ کو فکر لاحق رہتی ہے کیونکہ بے گناہ افراد کی ہلاکت سے کچھ بھی حاصل نہیں کیا جا سکتا ہے۔انہوںنے کہاکہ ٹرمپ انتظامیہ کشمیر سمیت تمام مسائل کو حل کرنے کیلئے باہمی طور پر مسائل کو ایڈریس کرنے کے اپنے موقف پر قائم ہے تاکہ اگر دونوں ممالک یقینی طور پر مسئلہ کشمیر پر امریکہ کی براہ راست مدد لینا چاہیں گے توامریکہ اس کیلئے بھی تیار ہوگا۔ان کا کہنا ہے کہ بھارت کیساتھ ساتھ پاکستان کیساتھ بھی بہتر تعلقات ہیں لہذا امریکہ چاہتا ہے کہ دونوں ممالک کے درمیان امن ومفاہمت کا سلسلہ جاری رہے اور کشمیر میں تشدد ختم ہو اور ان کے اندرونی مسائل بھی حل ہوں۔ادھر اقوام متحدہ کے سکریٹری جنرل کے ترجمان نے بھی کشمیر میں تشدد پر تشویش ظاہر کرتے ہوئے کہاکہ تشدد سے کچھ حاصل نہیں ہوگا۔ لہذا دونوں ممالک کو مسئلہ کشمیر سمیت دیگر تمام باہمی مسائل کو حل کرنے کی کوشش کرنا ہوگی۔ انہوںنے واضح کیا کہ دونوں ممالک کو آپسی طور پر مسئلہ کشمیر کا حل نکالنا ہوگا۔تاہم ان کا کہنا تھا کہ دونوں کی درخواست پر ہی اقوام متحدہ ثالثی کرسکتا ہے ۔ اقوام متحدہ کے سیکریڑی جنرل نے یقین دلایا کہ اقوام متحدہ مسئلہ کشمیر کو حل کرنے کیلئے اپنا رول ادا کریگا اورا س سلسلے میں وہ ثالثی کا کردار بھی ادا کرنے کیلئے تیار ہے۔انہوںنے مزید کہاکہ ہم چاہتے ہیں کہ صورتحال کو بہتر بنانے کیلئے ہمیں دونوں ممالک فی الوقت مذاکراتی عمل کو بحال کریں تاکہ ایک مناسب ماحول کی تعمیر ہو سکے جس میںمذاکرات کو نتیجہ خیز بنایا جا سکے۔دوسری جانب یورپی یونین اور انٹر نیشنل کمیونٹی ہیومن ڈویلپمنٹ نے مطالبہ کیا ہے کہ عالمی برادری مقبوضہ کشمیر میں حقوق انسانی کی خلاف ورزیاں کرانے کے لئے اپنا کردار ادا کرے بھارتی میڈیا کے مطابق کشمیر کونسل یورپی یونین اور انٹرنیشنل کمیو نٹی ہیومن ڈوپلمنٹ نے مطالبہ کیا ہے کہ عالمی برادری مقبوضہ کشمیر میں حقوق انسانی کی خلاف ورزیاں بند کروانے کے لئے اپنا کردار ادا کرے بھارتی میڈیا کے مطابق کشمیر کونسل یورپی یونین اور انٹرنیشنل کمونٹی ہیومن ڈوپلمنٹ کے زیر اہتمام برسلز میں ایک مباحثہ منعقد ہوا مباحصے کے دوران برسلز کے ایک فوٹو جرنلسٹ کی کشمیر میں بھارتی فورسز کے ہاتھوں ہونیوالے مظالم کی کھنچی گئی تصاویر کو بھی دکھایا گیا۔ اس موقع پر یورپین پارلیمنٹ میں کشمیر گروپ کے فرینڈز معاؤن چیئرپرسن اینتھیا مسائنٹائر کا کہنا تھا کہ وہ آئندہ ہفتے ایک وفد کیساتھ کشمیر کا دورہ کرینگی انہوں نے کہا کہ اگرچہ کشمیر اور فلسطین دونوں ایک ہی طرح کے حل طلب مسئلے ہیں تاہم اسوقت کشمیر کے مقابلے میں فلسیطن کو دنیا بھر میں زیادہ اجاگر کیا جارہا ہے انہوں نے کہا کہ اقوام متحدہ سمیت پوری عالمی برادری کو مسئلہ کشمیر کے حل کے لئے اپنا بھر پور کردار ادا کرنا چاہیے

امریکہ / اقوام متحدہ