عالمی جریدے اکانومسٹ کے مطابق ریمنڈ ڈیوس کے معاملہ پرپاکستان اور امریکہ کی ایجنسیوں کی کشمکش میں آئی ایس آئی کا پلڑا بھاری ہے

عالمی جریدے اکانومسٹ کے مطابق ریمنڈ ڈیوس کے معاملہ پرپاکستان اور امریکہ کی ایجنسیوں کی کشمکش میں آئی ایس آئی کا پلڑا بھاری ہے

اکانومسٹ میں شائع ہونے والی رپورٹ کے مطابق ریمنڈ ڈیوس کیس پر آئی ایس آئی اور سی آئی اے میں بعض امور پر اختلاف برقرار ہے ۔ رپورٹ میں بتایا گیا ہے آئی ایس آئی نے ہی اس امرکویقینی بنایاہے کہ دو پاکستانیوں کو قتل کرنے والے ریمنڈ ڈیوس کو رہائی نہ مل سکے ۔ جریدے نے لکھا ہے کہ امریکہ نے اب یہ تسلیم کرلیا ہے کہ ریمنڈ سی آئی اے کے لیے کام کررہا تھا ،جریدے کے مطابق امریکہ کا یہ دعوی درست نہیں کہ ریمنڈ کو سفارتی استثنی حاصل ہے ،اس کا نام اس واقعہ کے رونما ہونے تک سفارتی لسٹ میں نہیں تھا۔ رپورٹ کے مطابق سیاسی حریفوں کے شدید دباؤ کے باعث وفاقی حکومت ریمنڈ ڈیوس کو امریکہ بھجوانے کا فیصلہ کرنے کے قابل نہیں ۔