مقبوضہ کشمیر: ہندو نوجوان نے اسلام قبول کر لیا، نیا نام محمد شفیع رکھا گیا، لوگوں کی مبارکباد

سرینگر (آن لائن) مقبوضہ کشمیر میں ایک ہندو نوجوان نے اسلام قبول کر لیا۔ میڈیا رپورٹس کے مطابق 22 سالہ سورج پرکاش ولد پریم ناتھ ساکن چھاترو نے اپنا مذہب تبدیل کر کے اسلام قبول کرنے کی خواہش ظاہر کی جس کے بعد اسے خانقاہ فیض پناہ ترال لے جایا گیا جہاں مفتی نذیر احمد ترالی نے سورج پرکاش کو باضابطہ کلمہ پڑھایا اور وہ اسلام میں داخل ہوا۔سورج پرکاش کانیا نام محمد شفیع شیخ رکھا گیا جس کے بعد اسے لوگوں نے اسلام قبول کرنے پر مبارکباد دی۔اسلام قبول کرنے کے بعد نوجوان نے بتایا کہ وہ گذشتہ کئی برسوں سے یہاں مزدوری کرتا ہے اور قریب دس سالوں سے وہ اسلام سے متاثر ہے۔انہوں نے کہا کہ میں نے کشمیر آنے کے وقت ہی اپنی والدہ سے کہا ہے کہ وہاں سے میں مسلمان ہو کر آونگا اس لئے میں نے آج باضابطہ اسلام قبول کیا۔