عبداللہ عبداللہ نے کرزئی کا انتخاب غیر قانونی قرار دیدیا‘کابینہ میں شمولیت سے انکار

کابل( جی این آئی +رائٹرز+ اے پی پی ) افغان صدر حامد کرزئی آئندہ تین ہفتوں میں اپنی نئی کابینہ کا اعلان کریں گے جس میں ماہرین ٹیکنو کریٹس تعلیم اور دیگر شعبوں کے ماہرین کے علاوہ اچھی کارکردگی کا مظاہرہ کرنے والے موجودہ کابینہ کے چند وزراءبھی شامل کیے جائیں گے دریں اثناءکرزئی کے حریف عبد اللہ عبداللہ، جو انتخابات کے دوسرے مرحلے سے دستبردار ہوگئے تھے، نے نئی کابینہ میں کسی بھی طرح کی شمولیت سے انکار کیا ہے انھوں نے نیوز کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ وہ ” تبدیلی“ کے اپنے ایجنڈے پر کام کرتے رہیں گے ۔ عبد اللہ عبدا للہ کا کہنا تھا کہ کرزئی کا منصب صدارت کیلئے دوسری مرتبہ انتخاب غیر قانونی ہے غیر قانونی طریقے سے معرض وجود میں آنے والی حکومت کوئی کارکردگی نہیں دکھا سکے گی۔ اٹلی نے افغانستان کے صدارتی انتخابات کیلئے بھیجی گئی 400 فوجیوں کی کمک واپس بلا لی دوسری طرف یورپی ممالک نے افغانستان میں مزید فوج بھیجنے کو خارج از امکان قرار دیدیا ہے ۔