بھارت میں پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کے خلاف ہڑتال کے باعث معمولات زندگی معطل ہوگئے ۔

بھارت میں پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کے خلاف ہڑتال کے باعث معمولات زندگی معطل ہوگئے ۔

بھارت میں پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کے خلاف ہڑتال کے باعث معمولات زندگی معطل ہوگئے، مظاہرین اور پولیس کے درمیان جھڑپیں ہوئی ہیں جبکہ گرفتاریوں کا سلسلہ بھی جاری ہے۔ ہڑتال کی کال بھارتیہ جنتا پارٹی ، شیو سینا ، سماج وادی پارٹی اور بائیں بازو سے تعلق رکھنے والی جماعتوں نے دی تھی ۔ اس موقع پر ملک بھر میں بڑے پیمانے پر مظاہرے کیے جا رہے ہیں ۔ بعض علاقوں مظاہرین اور پولیس کے درمیان جھڑپیں ہوئی ہیں جس سے کئی افراد شدید زخمی ہوگئے۔ پولیس کی جانب سے اپوزیشن رہنماؤں کی گرفتاری کیلئے چھاپے مارے جا رہے ہیں اور چند ایک کو حراست میں لینے کی بھی اطلاعات ہیں ۔ بھارتی میڈیا کے مطابق ہڑتال سے وہ ریاستیں زیادہ متاثرہو ئی ہیں جہاں اپوزیشن جماعتوں کی حکومت ہے۔ بھارت میں پہلی مرتبہ انتہا پسنداورسیکولر جماعتیں کسی مشترکہ احتجاجی تحریک میں حصہ لے رہی ہیں۔ حکومت نے کچھ روز پہلے پیٹرولیم مصنوعات کی قیمتوں میں اضافے کا اعلان کیا تھا جس کے بعد ملک بھرمیں مظاہروں میں شدت دیکھی جارہی ہے ۔