وکی لیکس نے انکشاف کیا ہے کہ متحدہ قومی موومنٹ نے امریکہ اور برطانیہ کے دباؤ پر این آر اور کی مخالفت کی۔

وکی لیکس نے انکشاف کیا ہے کہ متحدہ قومی موومنٹ نے امریکہ اور برطانیہ کے دباؤ پر این آر اور کی مخالفت کی۔

وکی لیکس کےمطابق گزشتہ برس امریکی سفیراین ڈبلیو پیٹرسن سے ملاقات میں وزیر داخلہ رحمان ملک نے بتایا تھا کہ گورنر سندھ کے امریکہ کے دورے کے دوران اور لندن میں الطاف حسین پر این آراو کی مخالفت کے لیے دباؤ ڈالا گیا۔ تاہم این ڈبلیو پیٹرسن نے امریکہ کی طرف سے اس حوالے سے کسی بھی قسم کے دباؤ سے انکار کردیا۔ رحمان ملک نے امریکی سفیر کو زرداری حکومت اور وزراء کی بین الاقوامی سپورٹ کھونے کے تحفظات کر اظہار بھی کیا۔ ویب سائیٹ کے مطابق رحمان ملک نےاسٹیبلشمنٹ،
این آر اور اور زرداری حکومت کے خلاف سرگرمیوں میں ملوث ہونے کا انکشاف بھی کیا۔ رحمان ملک کا کہنا تھا کہ ایم کیو ایم نے انہیں آگاہ کیا کہ اس سازش میں آرمی چیف بھی شامل ہیں جس کا انہوں نے یقین نہیں کیا۔ دستاویز کے مطابق صدر آصف زرداری رواں سال ڈپٹی آرمی چیف کا عہدہ دوبارہ تخلیق کرکے ڈی جی آئی ایس آئی لیفٹیننٹ جنرل پاشا کو اس پر تعینات کرنا چاہتے ہیں۔ رحمان ملک نے پہلے ہی امریکہ پر واضح کر دیا تھا کہ این آر اور کے ختم ہونے سے صدر زرداری متاثر ہوں گے اور نہ ہی چیف جسٹس افتخار محمد چوہدری انہیں ان کے عہدے سے ہٹا سکیں گے۔