الطاف حسین کے بیان کا اعلی عدلیہ نوٹس لے :اوورسیز پاکستانی

پیرس (صاحبزادہ عتیق سے ) پاک فوج اور دفاعی اداروں کے خلاف الطاف حسین کے بیانات ملک دشمنی ہے ، حکومت پاکستان اور اعلی عدلیہ فوری نوٹس لیں۔ ان خیالات کا اظہار فرانس میں موجود پاکستانی یوسف خان ‘ اختر بٹ ‘ محمد حنیف ‘ عرفان شیخ ‘ جاوید اور دیگر نے وقت نیوز سے خصوصی گفتگو میں کیا۔ تارکین وطن کا کہنا تھا کہ ایم کیو ایم کے الطاف حسین کی تقریر پاکستان کے دفاعی اداروں کے خلاف نفرت کا پرچار اور آئین پاکستان سے غداری ہے۔ پاکستان کے معصوم شہریوں کی قاتل بدنام زمانہ بھارتی ایجنسی ؛ را؛ سے پاکستان کے خلاف مدد مانگنے سے الطاف حسین کا خبث باطن پوری قوم پر عیاں ہوچکا ہے۔ ایم کیو ایم کے رہنما جتنی مرضی صفائیا ں دے لیں اب عوام دھوکہ میں انے والے نہیں کراچی کے عوام کو خوف سے چھٹکارا دلانا حکومت وقت کا فرض ہے تمام اوورسیز پاکستانی حکومت سے اپیل کرتے ہیں کے ایم کیو ایم پر پابندی لگائی جائیاوراس کے نام نہاد لیڈران کو قرار وا قی سزا دی جائے۔ انہوں نے مزید کہا کہ نائین زیرو سے اسلحہ کی برآ مدگی اور انڈین ایجنسی ؛ را؛ سے ٹریننگ لیکر پاکستان میں ٹارگٹ کلنگ کرنے والے ایم کیو ایم کے ممبران کی گرفتاری نے انکی وطن دشمنی ثابت کردی ہے اب وقت آگیا ہے کہ را کے تربیت یافتہ دہشت گردوں اور انکے سرپرستوں کو عدالت کے کٹہرے میں لایا جائے اور قرار واقعی سزا دی جائے۔ اوورسیز پاکستانی الطاف حسین اور اسکے حواریوں کے بیانات کی سخت مذمت کرتے ہیں اور پاک فوج اور دفاعی اداروں کو پاکستان سلامتی کا ضامن سمجھتے ہیں اور ان پر اپنے مکمل اعتماد کا اظہار کرتے ہیں۔