یمن کے تمام فریق بحران کے حل کیلئے عالمی امن مذاکرات میں حصہ لیں : سلامتی کونسل

اقوام متحدہ (اے پی پی) اقوام متحدہ کی سیکورٹی کونسل نے یمن کی تباہ کن صورتحال پر تشویش ظاہر کرتے ہوئے تمام فریقوں پر زور دیا ہے کہ وہ مسائل کے حل کے لئے عالمی ادارے کے زیر اہتمام سیاسی مذاکرات میں حصہ لیں۔ فریقین پرزور دیا گیا کہ تشدد اور اشتعال انگیزی کسی مسئلے کا حل نہیں ‘ وہ بھرپور اعتماد میں پیشگی شرائط کے بغیر بات چیت میں حصہ لیں اور اپنے اختلافات کا خاتمہ تشدد کے بجائے مذاکرات سے کریں۔ جنیوا میں اقوام متحدہ کے تحت 28 مئی کو ہونے والے امن مذاکرات کی منسوخی پر مایوسی کا اظہار کرتے ہوئے سیکیورٹی کونسل نے کہا کہ یمن کی قیادت میں امن مذاکرات کا انعقاد وقت کی ضرورت ہے جس کے دوران باہمی اتفاق رائے سے تنازعات کا حل تلاش کیا جاناچاہئے۔ کونسل کے ممبران نے اقوام متحدہ سیکرٹری جنرل کے نمائندہ خصوصی کی امن کوششوں کی بھرپور حمایت کا اعادہ کرتے ہوئے سیکرٹری جنرل بان کی مون سے کہا کہ وہ یمن کے سیاسی بحران کے خاتمے کے لئے پرامن ‘ اجتماعی ‘ مربوط اور یمنی قیادت میں امن مذاکراتی عمل دوبارہ شروع کرانے کے لئے کوششیں کریں۔یمن میں بمباری جاری، 18 حوثی باغی اور ایک ہی خاندان کے 8افراد مارے گئے ۔