چین کو بھی پاکستان سے دراندازی کا سامنا ہے: بھارتی میڈیا کی درفنطنی

نئی دہلی(آئی این پی) بھارتی میڈیا نے پاکستان اور چین کے درمیان غلط فہمیاں پیدا کرنے کیلئے زہر آلود پراپیگنڈا شروع کردیا ہے۔ ایک بھارتی اخبار نے اپنی شرانگیز رپورٹ میں دعویٰ کیا کہ بھارت کے بعد اب چین کو بھی پاکستان سے ہونے والی دراندازی کا سامنا ہے جس سے نمٹنے کیلئے چین نے آزاد کشمیر سے منسلک سرحد پر خنجراب کے درہ پر بڑی تعداد میں فوج تعینات کردی ہے دراندازوں کیخلاف جنگ لڑ رہی ہے۔ بھارتی اخبار انڈین ایکسپریس نے دعویٰ کیا ہے کہ پاکستان اور افغانستان سے بڑی تعداد میں دہشت گرد دراندازی کرکے سرحدی صوبے سنکیانگ میں داخل ہورہے ہیں جس کے باعث وہاں تشدد اور فسادات میں اضافہ ہورہا ہے جس کے باعث چینی فوج نے درہ خنجراب پر گشت بڑھادیا ہے تاکہ دہشت گردوں اور شدت پسندوں کی آمد روکی جاسکے۔ رپورٹ کے مطابق چینی فوج شدت پسندوں کو قراقرم ہائی وے پر قائم خنجراب بائی پاس سے پیچھے دھکیل رہی ہے۔ چینی فوج کا کہنا ہے کہ کوئی دشمن ہمارے سرحد پار کرسکتا ہے نہ ہی کوئی دہشت گرد ہمارے اہداف تک پہنچ سکتا ہے۔ رپورٹ میں دعویٰ کیا گیا ہے کہ دہشت گردوں نے چینی سرحد کے بالکل قریب ٹھکانے قائم کررکھے ہیں کاشغر میں کئی دہشت گرد مارے بھی گئے ہیں۔ سنکیانگ میں دہشت گردوں کے حملے میں قتل عام ہوتا ہے۔ رپورٹ میں کہا گیا ہے کہ چین نے الزام عائد کیا ہے کہ مشرقی ترکستان اسلامک موومنٹ نے افغانستان اور پاکستان کے قبائلی علاقوں میں اڈے قائم کررکھے ہیں جبکہ قبائلی علاقوں میں پاکستانی فورسز کے فضائی حملوں میں اس تحریک سے تعلق رکھنے والے کئی دہشت گرد مارے بھی گئے ہیں۔