افغانستان: کرپشن کیخلاف ریلی میں خود کش دھماکہ، 20 ہلاک، بارودی سرنگوں کے دھماکے، ضلعی پولیس چیف، 6 فوجی مارے گئے

افغانستان: کرپشن کیخلاف ریلی میں خود کش دھماکہ، 20 ہلاک، بارودی سرنگوں کے دھماکے، ضلعی پولیس چیف، 6 فوجی مارے گئے

کابل (آئی این پی+اے پی پی+ اے ایف پی) افغانستان کے صو بہ خوست میں گورنر ہائوس کے قریب خودکش حملے میں 20 افراد ہلاک اور،ممبر پارلیمنٹ سمیت 50 زخمی ہوگئے ،طالبان نے دھماکے سے لاتعلقی کا اظہار کردیا،ادھرملک کے مختلف حصوں میں افغان سیکورٹی فورسز کے آپریشن میں طالبان کمانڈر سمیت 21 جنگجو ہلاک اور 18 زخمی ہوگئے جبکہ بارودی سرنگ کے دھماکوں میں ضلعی پولیس چیف ہلاک اور 6 افغان فوجی ہلاک ہوگئے ۔ صوبائی گورنر کے ایک ترجمان نے بتایا کہ خودکش بمبار نے گورنر ہائوس کے قریب صوبائی حکومت کی بدعنوانی کے خلاف نکالی گئی ایک ریلی کے شرکاء کے درمیان خود کو اڑا لیا جس کے نتیجے میں 20 افراد ہلاک اور50 زخمی ہوگئے ۔زخمیوں میں رکن پارلیمنٹ ہمایوں ہمایوں بھیشامل ہیںجو پارلیمنٹ کی دفاعی کمیٹی کے سربراہ ہیں۔ سول سوسائٹی کے سرگرم کارکن اور کچھ قانون ساز پاکستانی سرحد کے قریب واقع خوست صوبے میں حکومت کے خلاف گزشتہ ہفتے شروع ہونے والے ان مظاہروں کی قیادت کر رہے تھے۔ دھماکے کے باعث قریب کھڑی متعدد گاڑیوں کو بھی نقصان پہنچا ہے۔ زخمیوں کو فوری طور پر قریبی ہسپتالوںمیں منتقل کردیا گیا جہاں بیشتر کی حالت تشویش ناک بتائی جاتی ہے جسکے باعث ہلاکتوںمیں اضافے کا خدشہ ظاہر کیا گیا ہے ۔دریں اثنا جنوب میں واقع ہلمند صوبے میں سڑک کے کنارے نصب ایک بم پھٹنے سے ایک ضلعی پولیس چیف ہلاک ہو گیا۔مقامی حکام کے مطابق حکمت اللہ اکمل گریشک ضلع میں علی الصبح طالبان حملے کے مقام کی طرف جا رہا تھا جب اس کی کار کو نشانہ بنایا گیا۔ بارودی سرنگ کے دھماکوں میں 6 افغان فوجیمارے گئے ۔ سیکورٹی فورسز نے 54 دیسی ساختہ بم ڈیوائسز قبضے میں لے کر ناکارہ بنادیں۔وزارت داخلہ سے جاری بیان میں کہا گیا ہے کہ آپریشن ضلع سنگین اور موسیٰ قلعہ میں کیا گیا ۔بیان میں مزید کہاگیا ہے کہ سینکڑوں طالبان جنگجو ان اضلاع میں پناہ لیے ہوئے ہیں جو گرمیوں میں کاروائیاں کرنے کی تیاریاں کر رہے ہیں۔ ہلاک ہونے والے جنگجوئوں میں طالبان کمانڈر جمیل بھی شامل ہے۔ دوسری جانب شمالی صوبہ سرائے پل میں نامعلوم مسلح افراد نے 9شہریوںکو اغواء کرلیا۔ پاکستان نے افغان خوست میں خود کش حملے کی مذمت کی ہے ۔ دفتر خارجہ سے جاری مذمتی بیان میں کہا گیا ہے کہ کسی بھی حالات میں شہریوں کے خلاف ایسے بلا اشتعال حملوں کا کوئی جواز نہیں۔ پاکستان نے سوگوار خاندانوں سے ہمدردی اور تعزیت کا اظہار کیا اور زخمیوں کی جلد صحت یابی کے لئے دعا کی ہے۔ پاکستان نے ہر قسم کی دہشت گردی کی مذمت کا اعادہ کیا ہے۔