غیرت کے نام پر 20 فیصد قتل بھارت میں ہوتے ہیں: اقوام متحدہ

غیرت کے نام پر 20 فیصد قتل بھارت میں ہوتے ہیں: اقوام متحدہ

  نیو یا رک(آن لائن)اقوام متحدہ  کا کہنا ہے کہ  عالمی طور پر رونما ہونے والے غیرت کے نام پر قتل کے ہر پانچ واقعات میں سے ایک کا تعلق جنوبی ایشیائی ریاست بھارت سے ہے۔  اقوام متحدہ  کے تازہ اعداد و شمار کے مطابق حال ہی میں بھارتی دارالحکومت نئی دہلی کے نواحی علاقے میں ایک چودہ سالہ طالبہ اور اسی گھر کے ایک پچاس سالہ ملازم کو قتل کر دیا گیا تھا۔اقوام متحدہ کے مطابق ہر سال دنیا بھر میں غیرت کے نام پر قتل کے قریب پانچ ہزار کیس رپورٹ کئے جاتے ہیں اور ان میں سے قریب ایک ہزار کا تعلق بھارت سے ہوتا ہے۔ جبکہ اس شعبے سے وابستہ متعدد تنظیموں کے اندازوں کے مطابق غیرت کے نام پر قتل کے سالانہ واقعات کی تعداد قریب بیس ہزار ہے۔پاکستان اور افغانستان میں طالبان خواتین کے لیے سخت گیر خیالات رکھتے ہیں۔ غیرت کے نام پر قتل صرف بھارت کا ہی مسئلہ نہیں بلکہ پڑوسی ممالک پاکستان، افغانستان اور بنگلہ دیش میں بھی اس حوالے سے واقعات رپورٹ کئے جاتے ہیں۔ کئی ملکوں میں آج بھی یہ واضح نہیں ہے کہ اس جرم کے زمرے میں دراصل آتا کیا کیا ہے۔