شمالی کوریا نے اشتعال انگیزی کی تو سخت جواب دیا جائے گا : جنوبی کوریا

سیول+ واشنگٹن(نمائندہ خصوصی+ ایجنسیاں) جنوبی کوریا نے ایک بار پھر خبردار کرتے ہوئے کہا ہے کہ اگر شمالی کوریا نے کسی بھی قسم کی اشتعال انگیزی کا مظاہرہ کیا تو اس کیخلاف بھرپور جوابی کارروائی کی جائے گی۔ جنوبی کوریا کے صدر پارک جیون مائی نے وزیر دفاع اور دیگر وزراءکیساتھ بات چیت کرتے ہوئے کہا کہ اگر شمالی کوریا نے ہمارے ملک اور عوام کیخلاف کسی بھی قسم کی اشتعال انگیزی کا مظاہرہ کیا تو ہم مفاہمت کی پرواہ کئے بغیر بھرپور جوابی کارروائی کریں گے اور سخت جواب دیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ شمالی کوریا کو اشتعال انگیزی کی بجائے پرامن طریقے سے مسائل کے حل کی طرف توجہ دینی چاہئے۔ ان طیاروں کو جاپان سے جنوبی کوریا میں امریکہ کے مرکزی ”اوسان ایئر بیس“ پر تعینات کیا گیا ہے۔ذرائع کے مطابق اِس مشن کا مقصد دونوں سیﺅل اور پیانگ یانگ کو ایک پیغام بھیجنا ہے۔ دریں اثناء شمالی کوریا نے پاک پونگ جُو کو وزیراعظم مقرر کر دیا ہے۔ امریکی حکام اور ہتھیاروں کے ماہرین نے کہا ہے کہ شمالی کوریا کے ایٹمی ہتھیاروں کے تجربے سے یہ بات ثابت ہوئی ہے کہ شمالی کوریا اپنی ایٹمی صلاحیتوں میں اضافہ کر رہا ہے۔