بھارت: فیس بک تبصرے پر گرفتاری، ریاستی حکومت سے جواب طلب

نئی دہلی (اےن اےن آئی) سپریم کورٹ نے شیو سینا لیڈر بال ٹھاکرے کی موت کے بعد ممبئی میں نظامِ زندگی کے تعطل پر فیس بک پر تنقید کرنے والی دو لڑکیوں کی گرفتاری پر مہاراشٹر حکومت سے جواب طلب کر لیا۔ نئی دہلی کی ایک طالبہ شریا سنگھل کی درخواست پر چیف جسٹس التمش کبیر اور جسٹس جے چیلامیشور پر مشتمل بینچ نے حکومت کو نوٹس جاری کیا ہے جس میں پوچھا گیا ہے کہ کن حالات میں تھانے کی ان دو لڑکیوں کو گرفتار کیا گیا۔ اس پٹیشن میں آئی ٹی قانون کی دفعہ 66 اے کو ختم کرنے کی درخواست کی گئی ہے اسی دفعہ کے تحت پولیس نے مہاراشٹر کے تھانے ضلع میں پالگھر کی ان دو لڑکیوں کو گرفتار کیا تھا۔ بنچ نے ریاستی حکومت سے چار ہفتوں کے اندر اندر نوٹس کا جواب دینے کو کہا ہے عدالت نے مغربی بنگال اور پونڈی چری کی حکومتوں کو بھی اس معاملے میں فریق بنایا ہے ۔