گجرات: بااثر افراد کا ستایا شہری 5 بچوں سمیت خودکشی کیلئے 2 سو فٹ بلند ٹینکی پر چڑھ گیا

گجرات (نامہ نگار) محکمہ مال، بااثر افراد کا ستایا شہری پانچ بچوں سمیت دو سال بعد دوباہ 200فٹ اونچی ٹینکی پر چڑھ گیا احتجاج، خودکشی کی کوشش کی دھمکی دی۔ تفصیل کے مطابق محلہ سردار پورہ کے متاثرہ شہری ناصر اعوان نے پٹرول چھڑک کر پولیس کو اوپر آنے سے روکنے کیلئے سیڑھیوں میں آگ لگا کر راستہ بلاک کر دیا، مطالبات منظور کروانے کیلئے فضا سے پمفلٹ بھی گراتا رہا، احتجاجی مظاہر ہ کرنیوالے ناصر اعوان نے ہاتھوں میں پمفلٹ بھی تھام رکھے تھے جن پر اس ملک میں جنگل کا قانون رائج ہے، مجھے انصاف فراہم کیاجائے ، بچوں کو تحفظ دیاجائے، آرمی چیف، چیف جسٹس آف پاکستان کے نوٹس لینے تک احتجاج جاری رہے گا۔ آرمی چیف بچوں کو تحویل میں لے اور تحفظات فراہم کرے جیسے نعرے اور مطالبات درج تھے پولیس کے مطابق ناصر اعوان کے والد نے 1990ء میں عادووال بائی پاس کے قریب کروڑوں روپے مالیت کی 52مرلے اراضی خریدی اور چار دیوار ی تعمیر کر دی مگر جب بیرون ملک سے 25سال بعد واپسی پر دکانیں تعمیر کرنے کیلئے کام شروع کروایا گیا تو محکمہ مال نے تعمیر کرنے سے روک دیا اور بتایا کہ اُسکی اراضی 35سال قبل 1980میں محکمہ نے بائی پاس کیلئے ایکوائر کر لی تھی حالانکہ چار دیواری انہی کی تھی ناصر اعوان نے جمع پونجی لٹنے پر انصاف کیلئے اینٹی کرپشن گجرات، ڈائریکٹر اینٹی کرپشن گوجرانوالہ، ڈی جی اینٹی کرپشن کے دروازے کھٹکھٹائے۔ انہوں نے حلقہ کے پٹواری طالب حسین کو گنہگار اور مردہ قرار دے کر اپنی جان خلاصی کروالی اور پولیس کے کھاتہ میں کیس ڈال دیا جس پر سابق آئی جی پنجاب مشتاق سیکھرا نے سابق ڈی پی او گجرات کو انکوائری کے احکامات جاری کئے تو ٹیم نے انکشاف کیا کہ اینٹی کرپشن کی طرف سے مردہ قرار دیا گیا گلشن کالونی گجرات کا رہائشی پٹواری طالب حسین اور اراضی فروخت کرنے والے تمام کردار زندہ ہیں مگر کسی نے بھی ذمہ داران کو نہ تو گرفتار کیا اور نہ ہی ناصر اعوان کو اراضی فراہم کی، ناصر اعوان کا کہنا ہے کہ وہ 18سال سے سرکاری دفاتر میں انصاف کے حصول کیلئے دھکے کھارہا ہے مگر اُسکی کوئی شنوائی نہیں ہو رہی اُسکے بچوں سے چھت چھن جانے پر اُس نے جان دینے کا تہیہ کرلیا ہے۔ قبل ازیں ناصر اعوان 6جولائی 2015 کو اسی ٹینکی پر چڑھ کر احتجاج کرنے کے علاوہ اسلام آباد پریس کلب، وزیر داخلہ دفتر، پنجاب اسمبلی، لاہور پریس کلب، لاہور ہائیکورٹ کے احاطے میں بچوں کو فروخت کرنے، انصاف کے حصول کیلئے خودسوزی کی کوششوں سمیت کئی احتجاج کر چکا ہے مگر انصاف تاحال نہیں مل سکا۔ گزشتہ روز بھی پی ٹی آئی رہنما علیم اللہ گورالی، ڈی ایس پی سٹی حافظ امتیاز نے مذاکرات کر کے اسے نیچے اتارا اور تھانے اے ڈویژن لے گئے جہاں اسے رات گئے تک تھانے میں بٹھائے رکھا۔