لالہ موسیٰ ‘ نوازشریف کے پروٹوکول کی گاڑی نے12 سالہ لڑکا کچل دیا

گجرات + لاہور (نوائے وقت رپورٹ+ خصوصی نامہ نگار) سابق وزیراعظم نوازشریف کے پروٹوکول میں شامل ایلیٹ فورس کی گاڑیوں نے لالہ موسیٰ میں 12 سالہ لڑکے کو کچل دیا جس سے وہ موقع پر جان کی بازی ہار گیا۔ لالہ موسیٰ میں داخلے کے وقت نوازشریف کے قافلے میں شامل ایلیٹ فورس کی تیزرفتار گاڑی نے 12 سالہ لڑکے کو کچل دیا جس سے وہ موقع پر ہی جاں بحق ہو گیا۔ لڑکے کی شناخت احمد کے نام سے ہوئی اور وہ گجرات کی تحصیل لالہ موسیٰ کے محلہ رحمت آباد کا رہائشی تھا۔ بچے کی نعش دیکھ کر والدین پر غشی طاری ہوگئی۔ وزیر قانون پنجاب رانا ثنا ء اللہ نے کہا کہ واقعہ کی تحقیقات کی جائیگی۔ وزیراعلیٰ پنجاب نے واقعہ کا نوٹس لیتے ہوئے آئی جی پنجاب سے رپورٹ طلب کرلی ہے۔ بچے کا والد رحمت پہلے ہی دل کے مریض تھے، بچے کے ساتھ حادثے کا سن کر باپ کو دل کا دورہ پڑ گیا۔ اسے آئی سی یو میں داخل کرا دیا گیا ہے۔ بچے کی بہن بھی بے ہوش ہو گئی جبکہ ماں کی حالت نازک ہے۔ عینی شاہد کا کہنا ہے کہ قافلے میں شامل ایمبولینس بھی نہیں رکی۔ مدد کیلئے پکارتے رہے‘ کوئی نہیں رُکا۔ ٹکر مارنے والی گاڑی کا نمبر 265 ہے۔ بچے کے جاں بحق ہونے کا مقدمہ لالہ موسیٰ تھانہ میں درج کرلیا گیا۔ مقدمہ بچے کے چچا کی مدعیت میں نامعلوم ڈرائیور کیخلاف درج کیا گیا۔ لاہور سے خصوصی نامہ نگار کے مابق تحریک منہاج القرآن نے دعویٰ کیا ہے کہ نوازشریف کے قافلے میں شامل گاڑیوں اور موٹر سائیکلوں کی زد میں آکر جاں بحق ہونیوالا خالد حسین تحریک منہاج القرآن کا کارکن اور منہاج اسلامک سنٹر چک پیرانہ کا سکیورٹی گارڈ تھا جو نماز جمعہ کی ادائیگی کے بعد گھر واپس جا رہا تھا عوامی تحریک سنٹرل پنجاب کے صدر بشارت جسپال نے اخبار نویسوں سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ خالد حسین کے قتل کی ایف آئی آر نواز شریف کے خلاف درج کراوئی جائیگی، نااہل شخص کی ریلی قاتل ریلی میں تبدیل ہو چکی۔ انہوں نے کہا کہ ایک ہی دن میں نااہل نواز شریف نے 2 بے گناہوں کو قتل کیا ،گجرات میں گاڑیوں نے بچے کو کچل ڈالا اورنااہل قافلے کے سالار نے پلٹ کر بھی نہیں دیکھا۔
جاں بحق