امریکہ: میٹرو سٹیشنوں، بسوں پر توہین آمیز خاکے والا پوسٹر لگانے پر پابندی

واشنگٹن (نمائندہ خصوصی+ رائٹر) امریکہ کے دارالحکومت واشنگٹن ڈی سی کے محکمہ ٹرانسپورٹ نے شہر کے زیر زمین میٹرو ریلوے سٹیشنوں اور بسوں پر توہین آمیز خاکے والا پوسٹر لگانے کی درخواست مسترد کر دی ہے اور توہین آمیز پوسٹر لگانے پر پابندی عائد کر دی ہے۔ اظہارِ رائے کی آزادی کے حامی امریکن فریڈم ڈیفنس انیشیئٹو نامی گروپ توہین آمیز خاکے کو میٹرو سٹیشن اور بسوں پر لگانا چاہتا تھا۔ امریکی حکام نے اس کوشش کو عوامی ٹرانسپورٹ نظام میں ایک مخصوص معاملے پر مبنی تشہیر قرار دیتے ہوئے اس کی اجازت نہیں دی ۔ امریکن فریڈم ڈیفینس انیشیئٹو کی سربراہ پامیلا گیلر نے خاکے والا پوسٹر لگانے کے لیے واشنگٹن میٹروپولیٹن ٹرانزٹ اتھارٹی سے رابطہ کیا تھا۔ واشنگٹن پوسٹ کے مطابق اتھارٹی نے اس سال کے آخر تک سٹیشنوں پر ایسے تمام اشتہارات کی نمائش پر پابندی لگا دی ہے جن میں کوئی سیاسی یا مذہبی پیغام دیا گیا ہو۔ خیال رہے کہ پامیلا گیلر کے امریکن فریڈم ڈیفینس انیشیئٹو گروپ کو امریکہ میں حقوقِ انسانی کے نگران اداروں نے مسلم مخالف نفرت آمیز گروہوں کی فہرست میں شامل کیا ہوا ہے۔