”سرحدی کشیدگی“ پاکستان نے بھارت کو پیازکی برآمد روک دی

اسلام آباد + نئی دہلی (نیٹ نیوز+ اے این این) پاکستان نے حالیہ سرحدی کشیدگی کے باعث بھارت کو پیاز کی برآمد روک دی ہے جس کے بعد توقع ہے کہ ملک کے اندر پیاز کی بڑھتی قیمتوں میں کمی آ جائے گی۔ ادھر پاکستان کی جانب سے پیازکی برآمد روکے جانے کے بعد بھارت میں پیازکی قیمتیں آسمان سے باتیں کرنے لگیں جس سے شہری پریشان ہو گئے۔ میڈیا رپورٹ کے مطابق بھارت میں فی کلو پیاز کی قیمت20 روپے تھی جو بڑھ کر 100روپے سے تجاوز کر گئی ہے ۔ واضح رہے کہ بھارتی معیشت کو ایک دہائی میں بدترین بحران کا سامنا ہے۔ عام بھارتی شہری پیاز کی قیمت سے پریشان ہے یہی نہیں پیاز کاروبار کرنے والے یا خریدنے والے کو اپنی جان کے لالے پڑجاتے ہیں کیونکہ چند روزقبل نئی دہلی کی جے پور شاہراہ پر ڈاکوﺅں نے چالیس من پیاز سے لدے ہوئے ٹرک کو اغوا کر لیا۔ بھارت میں لوگ ہر سال 15 ملین ٹن پیاز کا استعمال کرتے ہیں پیاز کے بحران کے حوالے سے دہلی کے ایک مشہور ایف ایم ریڈیو سٹیشن نے مباحثہ کرایا۔ ایک سکالر کا کہنا تھا کہ انہوں نے اپنی شادی کی سالگرہ پر اپنی بیوی کو ایک انگوٹھی دی جس پر پیاز لگا ہوا تھا ۔واضح رہے پیاز کی بڑھتی ہوئی قیمتوں کی ایک وجہ پیاز کے ذخیرے میں کمی ہے کیونکہ خشک سالی کے سبب بھارت میں پیاز کی فصلیں تباہ ہو گئی تھیں۔ تازہ پیداوار صرف پانچ ماہ کے لیے دستیاب ہے، اور پھر ذخیرہ کیے گئے پیاز پر انحصار کرے گا۔ دہلی میں مہرولی سے ایک گھریلو خاتون جہاں آرا کا کہنا ہے ہم کس طرح پیاز کے بغیر کھانا کھا سکتے ہیں۔ پیاز پر سیاست کا کھیل جاری ہے۔ بھارتی جنتا پارٹی کے ایک رکن وجے جولی نے راکھی کے تہوار پر مٹھائی کے بجائے پیاز تقسیم کیا۔