پاکستان کا پانی روکا نہ روکیں گے: بھارتی ہائی کمشنر کا دعویٰ

کراچی (آن لائن) پاکستان میں تعینات بھارتی ہائی کمشنر شرت سبھروال نے کہا ہے کہ بھارت نے پہلے کبھی پاکستان کا پانی روکا ہے نہ آئندہ روکےں گے ، بھارتی حکومت نے پاکستانی سرماےہ کاروں کو بھارتی سرماےہ کاری بورڈکے توسط سے سرماےہ کاری کی اجازت دی ہے تاہم بھارتی ٹریڈ ریگولیٹرز پاکستان کی بزنس کمیونٹی کے ساتھ تجارتی عمل کا جائزہ لے رہے ہیں، سمندر کے ذریعے تجارت میں کمی کرتے ہوئے زمینی راستوں یعنی ریل اور روڈ کے ذریعے تجارت میں اضافہ ہونا چاہیئے، پاکستان اور بھارت کے درمےان تجارتی سامان کی منفی فہرست دسمبر 2012 تک ختم ہو جائے گی اور ڈبلیو ٹی او کے تحت تجارتی عمل شروع ہو جائے گا۔ وہ جمعرات کو کراچی چےمبر آف کامرس اےنڈ انڈسٹری کے دورہ کے موقع پر خطاب اور صحافےوں سے بات چےت کر رہے تھے۔ اس موقع پر صدر کراچی چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری ہارون اگر، چیئرمین بزنس مین گروپ سراج قاسم تیلی نے بھی خطاب کےا۔ بھارتی ہائی کمشنر نے کہا کہ بھارت کے وزیراعظم من موہن سنگھ کا عزم ہے کہ خطے کے تمام ممالک بشمول پاکستان کے ساتھ مل کر پورے خطے سے غربت کا خاتمہ کرتے ہوئے خوشحالی اور آگاہی لائی جائے۔ انہوں نے بتایاکہ بھارتی وزیراعظم نے پاکستان آنے کی دعوت قبول کی ہے۔ تاریخوں کا تعین ہونا باقی ہے۔ انہوں نے پاکستان بھارت تجارت مےں پیشرفت کا ذکر کرتے ہوئے بتاےا اس کے فوائد دونوں ممالک کے علاوہ سارک ممالک کو بھی حاصل ہوں گے۔ انھوں نے کہا کہ پاکستان اور بھارت کی مشترکہ جی ڈی پی تقریباً 2 ٹریلین سے زیادہ ہے۔ انہوں نے آگاہ کیا کہ دونوں ممالک کے بینک جلد متعلقہ ممالک میں اپنی شاخیں قائم کریں گے۔ کھوکھرا پار موناباﺅ بارڈر تجارت کیلئے کھولنے اور انڈین ائرلائز کے آپریشنز کے آغاز کے حوالے سے پاکستان بھارت جوائنٹ ورکنگ گروپ کے درمیان مذاکراتی عمل جلد متوقع ہے۔ پاکستان کی جانب سے بھارت کو پسندیدہ سٹیٹس دیئے جانے کے بعد اپریل 2013 تک بھارت ٹیرف لائنز میں مزید کمی کرتے ہوئے 100 ٹیرف لائنز تک لائے گا جبکہ پاکستان بھی اپنی حساس فہرست میں آئندہ 5 سالوں میں ٹیرف لائنز کم کرتے ہوئے 100 ٹیرف لائنز کی سطح پر لائے گا۔ بھارتی ہائی کمشنر شرت سبھروال نے کہا کہ انڈین پریمیر لیگ میں پاکستانی کھلاڑیوں کی شرکت پر کوئی پابندی نہیں۔ دسمبر میں پاکستانی ٹیم کے دورے سے تعلقات میں مزید بہتری آئیگی۔ پاکستانی ٹیم کے دورے کے بعد بھارتی کرکٹ ٹیم حالات کو دیکھتے ہوئے پاکستان کا دورہ کریگی۔