بھکر، پیرمحل، ظفروال، سادھوکے میں 4لڑکیوں سے زیادتی

پیرمحل+ ظفروال+ پاہڑیانوالی (نامہ نگاروں سے) پیرمحل، ظفروال، بھکر اور سادھوکے میں 4لڑکیوں کو اوباش افراد نے آبروریزی کا نشانہ بنا ڈالا جبکہ پاہڑیانوالی میں 5سالہ بچے سے زیادتی کی کوشش کرنیوالے کو لوگوں نے تشدد کے بعد پولیس کے حوالے کر دیا۔ تفصیلات کے مطابق سادھوکے میں الیاس مسیح کے گھر سے اوباش افراد محسن مسیح، قیصر مسیح اور یاسر مسیح نے 15سالہ بیٹی کو اغوا کر لیا اور قریبی مکان میں لے جاکر اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنایا۔ پولیس نے مقدمہ درج کر لیا۔ ظفروال کے موضع جرپال میں دو اوباشوں قیصر اور ضیاء نے محنت کش یوسف کی 20سالہ بیٹی کو گھر سے اٹھاکر خالد نامی شخص کے گھر میں محبوس کر دیا اور اجتماعی زیادتی کا نشانہ بنایا، لڑکی کو زخمی حالت میں چھوڑ کر فرار ہو گئے۔ پولیس نے دونوں ملزموں کو گرفتار کر لیا، ابتدائی میڈیکل رپورٹ میں جرم ثابت ہو گیا۔ ادھر پیرمحل کی مضافاتی بستی سی پلاٹ میں محنت کش ظہور احمد کے گھر اوباش ساجد مسیح گھس گیا اور اس کی 13سالہ بیٹی کو درندگی کا نشانہ بنا ڈالا اور فرار ہو گیا۔ ادھر لڑکی کی میڈیکل رپورٹ کو ملزموں کے ورثاء سے مک مکا سے خراب کرنے پر لڑکی کے ورثاء اور بستی کے سینکڑوں مکینوں نے سول ہسپتال کے احاطہ میں لیڈی ڈاکٹر اور ڈسپنسر کے خلاف مظاہرہ کیا۔ علاوہ ازیں پاہڑیانوالی میں مقامی پلازہ کا پلے دار ذیشان انصاری مقامی رہائشی آصف کے 5سالہ بچے کو ورغلا کر کھیت میں لے گیا اور اسے حیوانیت کا نشانہ بنانے کی کوشش کی، شور پر اہل محلہ نے اس شیطان کو پکڑ کر تشدد کا نشانہ بنایا اور پولیس کے حوالے کر دیا۔ بھکر سے نامہ نگار کے مطابق بھکر کے نواحی چک نمبر 47ٹی ڈی اے کی رہائشی 12سالہ طالبہ کتاب لینے کیلئے پڑوسی کے گھر گئی واپسی پر ملزم محمد مقبول لڑکی کو زبردستی کھینچ کر اپنے گھر لے گیا اور زیادتی کا نشانہ بنا ڈالا، واویلا سن کر اہل محلہ نے ملزم کو پکڑ لیا۔ پولیس کے حوالے کر دیا، تھانہ سرائے مہاجر نے ملزم کے خلاف مقدمہ درج کر لیا، ملزم مقامی ہائی سکول میں نویں کلاس کا طالبعلم ہے۔ لڑکی کی حالت تشویشناک بتائی جا رہی ہے۔ فیصل آباد سے نمائندہ خصوصی کے مطابق  ماموں کانجن کے رہائشی محنت کش کے بیٹے کو مبینہ طور پر زیادتی کا نشانہ بنا دیا گیا۔ تفصیلات کے مطابق ماموں کانجن چک نمبر548گ۔ب کے رہائشی محنت کش اللہ یار کا بارہ سالہ بیٹا (ن)گھر پر موجود تھا کہ ملزم سلیم اس کو کام کرنے کے بہانے اپنی حویلی میں لے گیا جہاں اْسے مبینہ طور پر زیادتی کا نشانہ بنا کر ملزم موقع سے فرار ہو گیا جبکہ پولیس نے مقدمہ درج کر کے کارروائی شروع کر دی۔