”کھانے میں کچھ ملا کر دیا جا رہا ہے“ سربجیت کا سونیا گاندھی کو خط

 ”کھانے میں کچھ ملا کر دیا جا رہا ہے“ سربجیت کا سونیا گاندھی کو خط

نئی دہلی (بی بی سی ڈاٹ کام) پاکستان کی جیل میں قید موت کے سزا یافتہ بھارتی شہری سربجیت سنگھ نے اندیشہ ظاہر کیا ہے کہ جیل میں ان کی زندگی کو خطرہ لاحق ہے۔ بھارت میں حکمران کانگریس پارٹی کی صدر سونیا گاندھی کو لکھے گئے ایک خط میں سربجیت سنگھ نے کہا ہے کہ جیل میں انہیں ’غیر صحتمند‘ کھانا دیا جا رہا ہے اور اس سے ان کے ہاتھوں اور پیروں پر اثر پڑ رہا ہے۔ جیل حکام کا رویہ بہت خراب ہے اور انہیں محسوس ہوتا ہے کہ ان کی جان کو خطرہ ہے۔ سربجیت سنگھ کو دہشت گردی کے جرم میں موت کی سزا سنائی گئی ہے اور وہ لاہور کی کوٹ لکھپت رائے جیل میں قید ہیں۔ سونیا گاندھی کے نام یہ خط پاکستان میں ان کے وکیل اویس شیخ لے کر لوٹے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ لاہور پہنچنے کے بعد وہ جیل حکام سے سربجیت کے بارے میں بات کریں گے۔ سربجیت نے ہندی میں تحریر اپنے خط میں لکھا ہے کہ ’میرے کھانے میں کچھ ملا کر دیا جا رہا ہے جس سے میری صحت روز بروز خراب ہوتی جا رہی ہے۔ سربجیت نے سونیا گاندھی سے درخواست کی ہے کہ وہ حکومت پاکستان سے اپیل کریں کہ وہ ان کی بہن اور بیٹی کو ان سے ملنے کیلئے ویزا جاری کرے۔