مسلم ممالک کے اتحاد اور اتفاق سے بہت سے مسائل ازخود حل ہونے لگیں گے : شاہ عبداللہ بن عبدالعزیز

مسلم ممالک کے اتحاد اور اتفاق سے بہت سے مسائل ازخود حل ہونے لگیں گے : شاہ عبداللہ بن عبدالعزیز

مکہ المکرمہ (نوائے وقت رپورٹ + ایجنسیاں) مکہ المکرمہ میں سعودی فرمانروا شاہ عبداللہ بن عبدالعزیز کی زیر صدارت او آئی سی کے ہنگامی اجلاس میں شام کے بحران، میانمار میں روہنگیا مسلمانوں پر تشدد اور مشرق وسطیٰ کی صورتحال پر غور کیا گیا۔ خادمین حرمین شریفین کے خطاب کی مزید تفصیلات کے مطابق انہوں نے کہا کہ مسلم ممالک کے اتحاد اور اتفاق سے بہت سے مسائل ازخود حل ہونے لگیں گے۔ فرانسیسی خبر ایجنسی کے مطابق سربراہ اجلاس کے اعلامیہ کا مسودہ اسے مل گیا ہے جس میں تنظیم نے شام کی رکنیت معطل کرنے کی منظوری دے دی ہے۔ یہ اقدام شام میں انسانی حقوق کی صورتحال کی وجہ سے کیا گیا۔ اے ایف پی نے دعویٰ کیا ہے کہ او آئی سی سربراہ اجلاس کے اعلامیہ کا مسودہ اسے مل گیا ہے جس میں تنظیم نے شام کی رکنیت معطل کرنے کی منظوری دے دی ہے۔ یہ تجویز سوموار کو وزارتی اجلاس میں دی گئی تھی۔ مسودہ کے مطابق شام کے صدر بشار الاسد کی حکومت سے ہر قسم کے تشدد کے خاتمہ کا مطالبہ کیا گیا ہے جبکہ اعلامیہ میں شام کی خودمختاری، آزادی، اتحاد اور علاقائی سلامتی کا دفاع کرنے کا عزم ظاہر کیا گیا۔ اجلاس میں ایرانی صدر محمود احمدی نژاد نے شام کی رکنیت معطل کرنے کی شدید مخالفت کی۔ سعودی فرمانروا شاہ عبداللہ نے اپنے خطاب میں اپیل کی کہ مذاہب کے درمیان مکالمے کیلئے ایک مرکز قائم ہونا چاہئے جس کے مسلم ممالک کے سربراہ رکن ہوں۔ انہوں نے کہا کہ اس سلسلے میں تجاویز او آئی سی سیکرٹریٹ کو بھیجی جائیں۔ سینیگال کے صدر نے کہا کہ تمام اسلامی ممالک آزاد فلسطینی ریاست کے قیام کے لئے کوشاں ہیں۔ انہوں نے کہا کہ اسلامی ممالک غربت اور افلاس کا شکار مسلم ممالک کی مدد اور تعاون کریں۔ او آئی سی کے سیکرٹری جنرل اکمل الدین احسان اوگلو نے کہا کہ مسلم ممالک کو ترقی یافتہ ملکوں کی فہرست میں شامل کرنے کے لئے باہمی تعاون میں اضافہ کیا جائے۔ اجلاس میں زرداری کے ساتھ بلاول بھٹو اور حنا کھر بھی شریک ہوئے۔ دریں اثنا صدر زرداری اور ترکی کے صدر عبداللہ گل کے درمیان ملاقات ہوئی۔ دونوں رہنماﺅں کے درمیان خطے کی صورتحال، مسلمانوں کو درپیش مسائل، ترکی اور پاکستان کے درمیان تعلقات کو مزید فروغ دینے سمیت مختلف امور پر بات چیت کی گئی۔ زرداری سے قطر کے امیر شیخ حماد بن خلیفہ الثانی نے بھی ملاقات کی جس میں دوطرفہ تعلقات اور اہم علاقائی اور عالمی امور اور مختلف شعبوں میں تعاون بڑھانے پر تبادلہ خیال کیا گیا۔ صدر سے امریکہ کے او آئی سی کے نمائندے ارشاد حسین نے ملائشیا کے وزیراعظم نجیب رزاق سے بھی ملاقات کی۔