ججز کی 1013 نئی آسامیاں پیدا کی جائینگی، 18 ارب 11 کروڑ تجویز

لاہور (اپنے نامہ نگار سے ) حکومت پنجاب نے پاکستان کی تاریخ میں پہلی مرتبہ ایڈیشنل ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن ججز کی 313 اور سول ججز کی 696 اسامیاں پیدا کی ہیں۔ مختلف عدالتوں کے لئے آئندہ مالی سال میں اس کے لئے 18 ارب 11 کروڑ روپے مختص کئے جا رہے ہیں۔پنجاب حکومت نے ماتحت عدلیہ میں ججز کی خالی آسامیوں کو پُر کرنے کیلئے ہائیکورٹ اور ماتحت عدلیہ کے لیے 15ارب 75 کروڑ روپے کا بجٹ مختص کردیا ۔عدالتوں اور ججوں کیلئے بجٹ کی مد میں 3 ارب ایک کروڑ 32 لاکھ روپے رکھے گئے ہیں۔صوبہ بھر کی سیشن عدالتوں کیلئے 3 ارب 91 کروڑ 61 لاکھ 46 ہزار روپے مختص سول کورٹس کیلئے 7ارب 53کروڑ 13 لاکھ 46 ہزار روپے رکھے گئے ہیںخصوصی عدالتوں کیلئے 11 کروڑ 27 لاکھ 13 ہزار روپے مختص کیے گئے ہیںکورٹس آف سمال کاز کیلئے 3 کروڑ 39 لاکھ اور جوڈیشل اکیڈمی کیلئے 26 کروڑ 69 لاکھ روپے رکھے گئے، ججز کی خالی آسامیوں کو پر کرنے کا فیصلہ کیا۔ لاہور ہائیکورٹ، پنجاب کی سیشن کورٹس، سول کورٹس، خصوصی عدالتیں، کورٹس آف سمال کاز، پنجاب جوڈیشل اکیڈمی، سولسٹری ڈیپارٹمنٹ، مفصل اسٹیبلشمنٹ اور ایڈووکیٹ جنرل کیلئے مجموعی طور پر 15 ارب 75 کروڑ 80 لاکھ 80 ہزارروپے مختص کئے گئے ہیں۔