مدت ختم: موبائل کمپنیوں نے ایک کروڑ غیر تصدیق شدہ سمیں بند کرنے کا کام شروع کر دیا

اسلام آباد (عاطف خان/ دی نیشن رپورٹ) موبائل فون کی بائیو میٹرک طریقے سے ازسرنو تصدیق کا عمل ختم ہو گیا۔ گزشتہ شب ختم ہو جانے کے بعد موبائل فون کمپنیوں نے تقریباً ایک کروڑ غیر تصدیق شدہ سمیں بند کرنے کا عمل شروع کر دیا ہے۔ اس حوالے سے تاہم بہت سے سوالات ابھی تشنہ تکمیل ہیں۔ پی ٹی اے کے مطابق 60,496,307 کمپیوٹرائزڈ شناختی کارڈز کے ذریعے 78 ملین سموں کی تصدیق کی گئی ہے۔ 3 ماہ کی اس مہم کے دوران اب تک مجموعی طور پر 103 ملین سموں کی تصدیق ہوئی ہے۔ پی ٹی اے کے مطابق 11,757,797 سموں کی کسی نے ملکیت ظاہر نہیں کی۔ سمیں بند کرنے کا عمل آج شروع ہو کر دو دن میں ختم ہو گا۔ تاہم غیر ملکیوں یا اوورسیز پاکستانیوں کی سمیں ابھی بند نہیں ہونگی۔ بائیو میٹرک تصدیق کے بعد بند ہونے والی سمز دوبارہ چالو ہو سکیں گی۔ پاکستان ٹیلی کمیونی کیشن اتھارٹی کے مطابق پہلے مرحلے کی تکمیل پر بائیو میٹرک تصدیق نہ ہونے پر 77 لاکھ سموں کو بلاک کیا گیا ہے۔ تمام غیر ملکیوں کیلئے دو سے زیادہ سمز رکھنے پر پابندی عائد کی گئی ہے۔