سٹاک مارکیٹ کے بعد پاکستان نے جغرافیائی سیاست میں بھی بھارت کو شکست دیدی: فوربز

واشنگٹن (نوائے وقت رپورٹ) پاکستان نے سٹاک مارکیٹ کے بعد جغرافیائی سیاست میں بھی بھارت کو شکست دیدی۔ امریکی جریدے فوربز کی رپورٹ کے مطابق پاکستانی رہنمائوں نے امریکہ اور چین سے بے شمار ملکی مفادات حاصل کئے۔ نائن الیون کے بعد افغان جنگ میں امریکہ کو بطور اتحادی پاکستان کی ضرورت تھی، پاکستانی قیادت نے غیر ملکی قرضے میں ریلیف کی صورت میں اتحادی بننے کی پیشکش کی۔ اس وقت پاکستان کا بیرونی قرضہ ملکی جی ڈی پی کا 60 فیصد تھا۔ امریکہ سے اتحاد نے پاکستان کے قرض کی ری شیڈولنگ کیلئے سازگار ماحول فراہم کیا۔ پاکستان نے امریکہ سے غیر ملکی قرضے کے بڑے حصے کی معافی سمیت ملکی مفاد حاصل کئے۔ دسمبر 2001ء میں پیرس کلب نے پاکستان کا 12 ارب ڈالر کا قرضہ ختم کردیا۔ آئی ایم ایف نے بھی پاکستان کو اضافی فنڈز فراہم کئے۔ بیرون ملک مقیم پاکستانیوں کی ترسیلات زر اور غیر ملکی ایکویٹی سرمائے سے پاکستانی کرنسی مضبوط ہوئی۔ 2008-09ء کے معاشی بحران کے بعد چین نے پاکستانی مارکیٹ کو دوبارہ ترقی کی راہ پر ڈال دیا۔ بیجنگ کو درکار مغربی روٹ کیلئے 46 ارب ڈالر کا پاک چین اقتصادی راہداری منصوبہ عمل میں آیا۔ چین پاکستان کی انفراسٹرکچر کمپنیوں میں بھی سرمایہ کاری کررہا ہے۔ چین نے نیوکلیئر سپلائر گروپ میں شامل ہونے کی بھارتی کوششوں کو محدود کردیا ہے۔ کشمیر کے مسئلے پر بھی چین پاکستان کے ساتھ کھڑا ہے۔