عمران خان کیخلاف ہتک عزت کیس کا فیصلہ محفوظ، سماعت 22 مارچ تک ملتوی

پشاور(ثناء نیوز) ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن کورٹ نے پاکستان تحریک انصاف کے سربراہ عمران خان کے خلاف ہتک عزت کیس کا فیصلہ 22 مارچ تک محفوظ کر لیا گیا۔ عمران خان کے خلاف ہرجانے کا مقدمہ قومی وطن پارٹی کے رہنما اور خیبر پی کے کے معزول وزیر صنعت بخت بیدار کی جانب سے دائر کیا گیا تھا ۔ عمران خان کے وکیل قاضی انور اور عامر ایڈووکیٹ پیش ہوئے جنہوں نے عدالت کو بتایا کہ بخت بیدار کو عہدے سے وزیراعلیٰ خیبر پی کے نے ہٹایا۔ اس برطرفی میں عمران خان کا کوئی کردار نہیں۔ وزیراعلیٰ یہ استحقاق رکھتے ہیں کہ کسی بھی وزیر کو عہدے سے ہٹادیں یا وزارت تبدیل کر دیں۔ بخت بیدار خان کی طرف سے بابر یوسفزئی اور کفایت اللہ نے عدالت میں دلائل دئیے کہ انکے موکل کی برطرفی عمران خان کی ہدایت پر کی گئی جبکہ عمران خان نے سوشل میڈیا اور ٹوئٹر پر بخت بیدار کے حوالے سے پیغام بھی دیا۔ ڈسٹرکٹ اینڈ سیشن جج شیبر خان نے دونوں طرف کے وکلاء  کے دلائل سننے کے بعد فیصلہ محفوظ کر لیا اور کیس کی سماعت 22 مارچ تک ملتوی کر دی۔