برطانیہ بھارت سے سول نیوکلیئر تعاون معاہدے پر راضی، جلد مذاکرات کا اعلان

نئی دہلی (نیوز ڈیسک) برطانیہ بھارت کے ساتھ سول نیو کلیئر شعبے میں تعاون کے معاہدے پر راضی ہوگیا، دونوں ممالک نے اس حوالے سے جلد مذاکرات شروع کرنے کا فیصلہ بھی کیا، نئی دہلی میں گزشتہ روز بھارت کے دورے پر آئے برطانوی وزیر خارجہ ولیم ہیگ نے اپنی بھارتی ہم منصب سشما سوراج سے ملاقات اور سول نیو کلیئر تعاون سمیت مختلف معاملات پر مذاکرات کئے۔ ملاقات کے دوران بھارتی وزیر خارجہ سشما سوراج نے کئی بھارتی بچوں سے زیادتی کے ملزم انگریز ریمنڈ وارلے جو ان دنوں برطانیہ میں ہے کو بھارت کے حوالے کرنے کا مطالبہ کیا جس پر ولیم ہیگ نے کہا کہ برطانیہ اس معاملے پر غور کرے گا۔ بھارتی میڈیا کے مطابق دونوں رہنمائوں میں ملاقات اڑھائی گھنٹے تک جاری رہی جس میں انہوں نے دوطرفہ تجارتی، معاشی تعلقات اور تعاون کو بڑھانے پر بھی غور کیا گیا۔ بھارتی وزیر خارجہ نے ولیم ہیگ پر زور دیا کہ برطانوی کمپنیاں بنگلور ممبئی اکنامک کوریڈور انفراسٹرکچر پراجیکٹ میں سرمایہ کاری کریں۔ واضح رہے بھارت اس حوالے سے برطانیہ کو نومبر تک واضح پلان دے گا۔ علاوہ ازیں برطانیہ بھارت میں سرمایہ کاری کرنے والا تیسرا بڑا ملک ہے۔ دونوں ممالک کے درمیان تجارتی حجم 15 ارب ڈالر سالانہ ہے۔ دریں اثناء ولیم ہیگ نے نئی دہلی میں گاندھی کی سمادھی کے دورے کے موقع پر اعلان کیا کہ بھارت کے بانی کا مجسمہ برطانوی پارلیمنٹ کے سامنے ابراہم لنکن اور نیلسن منڈیلا کے ساتھ نصب کیا جائے گا۔