تحریک طالبان پاکستان نے جہادی فورسز مقبوضہ کشمیر بھیجنے کا اعلان کردیا

 واشنگٹن (آن لائن) تحریک طالبان پاکستان نے مقبوضہ کشمیر میں بھارتی فوج کیخلاف لڑنے کے لئے ساتھی جنگجوﺅں کو بھیجنے اور بھارت میں نفاذ شریعت کے لیے عملی جدوجہد کرنے کا اعلان کردیا ہے ۔ غیر ملکی خبررساں ادارے کے مطابق تحریک طالبان پاکستان کے سینئر رہنما ولی الرحمان نے تحریک کے سربراہ حکیم اللہ محسود کے ہمراہ ایک تازہ ویڈیو پیغام میں کہا کہ وہ جس شرعی نظام کے نفاذ کیلئے پاکستان میں لڑ رہے ہیں بالکل اسی طرح مقبوضہ کشمیر اور بھارت میں بھی عملی طور پر نفاذ شریعت کے لیے جدوجہد کا ارادہ رکھتے ہیں اور اس سلسلہ میں طالبان جنگجوﺅں کو مقبوضہ کشمیر بھیجا جائے گا ۔ دونوں رہنماﺅں نے کہا کہ لوگوں کے تمام مسائل کا واحد حل نفاذ شریعت میں ہی ہے امریکی تھینک ٹینک مڈل ایسٹ میڈیا ریسرچ انسٹی ٹیوٹ کے مطابق یہ ویڈیو ترجمان طالبان احسان اللہ احسان کی جانب سے جاری کی گئی ہے جس میں کہا گیا ہے کہ ہم نے اپنے طور پر جہاد شروع کرنے اور جہادی فورسز کو دہلی کے مختلف علاقوں میں بھیجنے کا فیصلہ کیا ہے جس کے تحت جہادی فورس کشمیر میں داخل ہوگی اور وہاں نفاذ شریعت کے علاوہ کشمیری عوام کو جملہ حقوق کے حصول میں بھی مدد ملے گی ۔ ویڈیو پیغام میں ولی الرحمن نے پاکستان کی کشمیر پالیسی پر بھی شدید تنقید کی اور کہا کہ اس پالیسی کے تحت کشمیریوں کی جدوجہد آزادی اور نظام کی تبدیلی کے حوالے سے کی جانے والی کوششوں کو تباہ کردیا گیا ہے۔