پشاور: نامعلوم افراد کی فائرنگ سے مذہبی رہنما قتل

پشاور (این این آئی) پشاور کے تاریخی بازار قصہ خوانی میں منگل کی صبح نامعلوم افراد نے فائرنگ کرکے تحریک نفاذ فقہ جعفریہ کے رہنما کو قتل کر دیا ایک مقامی پولیس اہلکار کے مطابق علی اصغر قصہ خوانی میں اپنی دکان پر جا رہے تھے کہ نا معلوم افراد نے ان پر فائرنگ کی علی اصغر کو زخمی حالت میں لیڈی ریڈنگ ہسپتال لے جایا گیا جہاں وہ زخموں کی تاب نہ لاتے ہوئے دم توڑ گئے ہیںواقعہ کے بعد بڑی تعداد میں شیعہ برادری کے لوگ ہسپتال پہنچے۔امامیہ جرگہ کے رابطہ سیکرٹری اخونزادہ مظفر نے بتایا کہ علی اصغر کی عمر ساٹھ سال تھی اور وہ تحریک نفاذ فقہ جعفریہ کے صوبائی رہنما تھے۔علی اصغر چائے کا کاروبار کرتے تھے، ان کی دکان قصہ خوانی میں تھی اورمنگل کی صبح ان پر اس وقت حملہ کیا گیا ہے جب وہ اپنی دکان پر جا رہے تھے۔اخونزادہ مظفر نے بتایا کہ شیعہ افراد پر حملوں میں اضافہ ہوا ہے ٗ انھیں تحفظ فراہم کرنے کے لیے سکیورٹی ادارے کچھ نہیں کر رہے ہیں۔ انہوں کہاکہ رواں ماہ چار افراد پر حملے ہو چکے ہیں ٗ جن کے  ملزمان اب تک گرفتار نہیں کئے گئے۔اخونزادہ مظفر نے کہا کہ پولیس تفتیش کا نظام ہی صحیح نہیں ہے جب کسی کے ساتھ ان کی دشمنی ہی نہیں ہے تو پھر وہ کیسے کس پر انگلی اٹھا سکتے ہیں۔