واشنگٹن: کانگرس کی بلڈنگ کے باہر فائرنگ، متعدد زخمی، حملہ آور خاتون ہلاک

واشنگٹن (نوائے وقت رپورٹ+ رائٹر+ اے ایف پی) واشنگٹن میں امریکی کانگرس کی عمارت کے قریب مبینہ خاتون حملہ آور کی فائرنگ سے پولیس اہلکاروں سمیت متعدد افراد زخمی ہو گئے۔ پولیس نے خاتون حملہ آور کو ہلاک کر دیا۔ امریکی میڈیا کے مطابق فائرنگ کے واقعات سیکنڈ سٹریٹ اور ایوان دستور کے قریب پیش آئے۔ زخمیوں کو فوری طبی امداد کیلئے ہسپتال منتقل کر دیا گیا۔ فائرنگ سے سپریم کورٹ کی عمارت کے باہر کھڑے افراد زخمی ہوئے۔ فائرنگ کے وقت امریکی کانگرس میں شٹ ڈاﺅن کے حوالے سے اجلاس جاری تھا اور جان مکین خطاب کر رہے تھے۔ ایوان کے دروازے بند کر دیئے گئے اور ارکان اندر محصور ہو گئے۔ کانگرس میں سینیٹروں کی بڑی تعداد موجود تھی۔ پولیس اور ایف بی آئی نے علاقے کو گھیرے میں لے لیا اور آپریشن کیا۔ ہیلی کاپٹرز نے نگرانی شروع کر دی۔ واشنگٹن کے داخلی اور خارجی راستے بند کر دیئے گئے۔ مبینہ خاتون حملہ آور کو کانگرس کی عمارت کے باہر فائرنگ کر کے ہلاک کر دیا گیا۔ بتایا جاتا ہے کہ کار میں سوار خاتون حملہ آور نے وائٹ ہاﺅس کے قریب سکیورٹی بیریئر کو توڑا، پولیس نے اس کا تعاقب کیا اور کانگرس کی عمارت کے قریب اسے فائرنگ کر کے ہلاک کر دیا۔ حملہ آور کی فائرنگ سے پولیس اہلکاروں سمیت متعدد افراد زخمی ہو گئے۔ اس موقع پر سڑکوں پر ٹریفک جام ہو گئی۔ امریکی صدر اوباما کو فائرنگ کے واقعہ سے آگاہ کر دیا گیا۔ فائرنگ کے واقعہ سے امریکی سٹاک ایکسچینج میں مندے کا رجحان رہا۔ اس واقعہ کے بعد ارکان کانگرس اندر محصور ہو کر رہ گئے۔ اس کے بعد بڑا سکیورٹی آپریشن کیا گیا۔ یہ فائرنگ ایسے وقت ہوئی ہے جب حکومت اور حزب اختلاف کے درمیان بجٹ پر اتفاق نہ ہونے کے باعث شٹ ڈاو¿ن جاری تھا۔ اطلاعات کے مطابق کیپیٹل ہل کے باہر فائرنگ ہوئی اور ابتدائی اطلاعات کے مطابق کسی ہلاکت کی اطلاع نہیں۔ پولیس نے عمارت کو چاروں طرف سے گھیر لیا ہے اور سنیٹرز کو کہا گیا ہے کہ وہ عمارت کے اندر رہیں اور کھڑکیوں سے دور رہیں۔ اطلاعات کے مطابق فائرنگ سے 5 افراد زخمی ہوئے جس کے بعد پولیس نے علاقے کو گھیرے میں لے لیا۔ اس واقعے کے بعد ایوان کے دروازے بند کردئیے گئے ایف بی آئی کے ہیلی کاپٹر جائے وقوعہ پر پہنچ گئے۔ کانگریس میں معاشی شٹ ڈاﺅن کے حوالے سے اجلاس ہورہا تھا کہ فائرنگ کا واقعہ پیش آگیا آخری اطلاعات تک علاقے کو گھیرے میں لے کر ملزموں کی تلاش شروع کر دی گئی ہے۔ حملہ آور ایک گاڑی میں سوار تھے۔ بعض امریکی صحافیوں کا کہنا ہے کہ ایسا معلوم ہوتا ہے کہ شٹ ڈاﺅن کی وجہ سے کسی نے فائرنگ کردی۔ امریکی میڈیا نے بتایا کہ ایک مشتبہ گاڑی کو بھی قبضے میں لے لیا گیا ہے۔ زخمیوںمیں ایک پولیس اہلکار بھی شامل ہے فائرنگ کا واقعہ کیپٹل کے علاقے میں پیش آیا جس کے قریب امریکی سپریم کورٹ ، وائٹ ہاﺅس کی عمارتیں واقع ہیں۔