پاک فوج پر سرحد پار سے حملوں کا الزام، پاکستان سے سکیورٹی مذاکرات نہیں کرینگے: افغانستان

کابل (اے ایف پی) افغانستان نے کہا ہے کہ بقول انکے پاک فوج کی جانب سے سرحد پار سے حملوں پر ناراضی کے باعث پاکستان سے اسلام آباد میں سکیورٹی مذاکرات نہیں کریگا۔ افغان ایوان صدر کے بیان کے مطابق صدر حامد کرزئی کی زیرصدارت نیشنل سکیورٹی کونسل کے اجلاس میں پاک فوج کی جانب سے راکٹوں کے حملوں کی مذمت کی گئی ہے۔ بیان میں کہا گیا ہے کہ ان حملوں کا مقصد 14 جون کو صدارتی انتخابات کے دوران دوسرے مرحلے میں خلل ڈالنا ہے۔ افغان وزارت دفاع کے ترجمان محمد ظاہر عظیمی نے الزام عائد کیا کہ پاکستانی ہیلی کاپٹرز نے سرحد پار کر کے کنڑ پر پروازیں کیں۔ بیان کے مطابق پاکستان کے سامنے معاملہ وزارت خارجہ کے ذریعے اٹھایا ہے۔