بجلی بل فیول ایڈجسٹمنٹ پر نظرثانی‘ صارفین کیلئے 34 ارب کی ریلیف کا نوٹیفکیشن جاری

اسلام آباد (خبرنگار) نیپرا نے بجلی صارفین کو فیول پرائس ایڈجسٹمنٹ کی مد میں ریلیف دینے کا اعلان کیا ہے۔ فیصلہ گذشتہ مالی سال کی فیول ایڈجسٹمنٹ پر نظرثانی کے بعد کیا گیا، نیپرا کی طرف سے جاری نوٹیفکیشن کی مزید تفصیل کے مطابق بجلی تقسیم کار کمپنیوں کو ہدایت کی گئی ہے کہ وہ دسمبر 2013ء کے بجلی بلوں میں جولائی 2012ء کی فیول ایڈجسٹمنٹ کی مد میں صارفین کو 86پیسے فی یونٹ واپس کریں، اگست 2012ء کی فیول ایڈجسٹمنٹ کی مد میں 58پیسے فی یونٹ کے حساب سے رقم واپس کریں، ستمبر 2012ء کے فیول ایڈجسٹمنٹ کی مد میں صارفین کو کوئی ریلیف نہیں ملا مگر اکتوبر 2012ء کی فیول ایڈجسٹمنٹ کی مد کا ریلیف صارفین کو جنوری 2014ء میں آنے والے بجلی بلوں میں ملے گا جو 70پیسے ہے۔ نومبر کے لئے 85پیسے فی یونٹ ہو گا، اس طرح صارفین کو اگلے سال فروری میں تین مہینے دسمبر، جنوری اور فروری 2013ء کی فیول ایڈجسٹمنٹ سے ریلیف دیا جائے گا جو بالترتیب 51پیسے، 87پیسے اور 42پیسے فی یونٹ ہو گا۔ آئندہ سال مارچ میں صارفین کو فی یونٹ 2روپے 39پیسے، اپریل میں 2روپے 52پیسے اور 93پیسے کا ریلیف ملے گا۔ آن لائن کے مطابق نیپرا نے جولائی 2012ء سے مئی 2013ء تک کے بجلی بلز میں فیول ایڈجسٹمنٹ پر نظرثانی کرتے ہوئے صارفین کو اپریل 2014ء تک بجلی کے نرخوں میں 2روپے 52پیسے فی یونٹ تک ریلیف دینے کا نوٹیفیکیشن جاری کیا، ریلیف کا اطلاق کراچی الیکٹرک سپلائی کمپنی( کے ای ایس سی) کے علاوہ تمام بجلی تقسیم کار کمپنیوں پر ہو گا۔ نوٹیفکیشن کے مطابق گزشتہ مالی سال 2012-13ء کے ابتدائی گیارہ ماہ کے وصول کردہ بجلی بلوں میں فیول ایڈجسٹمنٹ کی مد میں عوام کو رواں ماہ دسمبر سے اپریل2014ء تک مجموعی طور پر 34ارب روپے کا ریلیف دیا جائے گا۔ جولائی 2012ء سے مئی 2013 ء کے بجلی بلز میں فیول ایڈجسٹمنٹ کی مد میں دیئے جانے والے ریلیف پیکیج کے تحت رواں ماہ دسمبر کے بجلی بلز میں صارفین کو 1روپے 44پیسے فی یونٹ ریلیف دیا جائے گا۔ جنوری 2014ء کے بجلی بلز میں 1روپے55پیسے فی یونٹ، فروری کے بلز میں 42پیسے، مارچ کے بلز میں 2 روپے 39پیسے اور اپریل 2014ء کے بجلی بلز میں 2روپے 52پیسے فی یونٹ کا ریلیف فراہم کیا جائیگا۔ نوٹیفیکیشن کے مطابق بجلی بلوں میں اس ریلیف کا اطلاق کراچی الیکٹرک سپلائی کمپنی کے علاوہ ملک بھر کی تمام بجلی تقسیم کار کمپنیوں پر ہو گا۔