میانمار میں مسلمانوں کا قتل عام او آئی سی کی ایگزیکٹو کمیٹی نے 5 اگست کو اجلاس طلب کر لیا

میانمار میں مسلمانوں کا قتل عام او آئی سی کی ایگزیکٹو کمیٹی نے 5 اگست کو اجلاس طلب کر لیا

جدہ (ثناءنیوز) اسلامی سربراہی کانفرنس نے میانمار میں مسلمانوں کے قتل عام کا نوٹس لے لیا ہے۔ صورتحال پر غور کے لئے او آئی سی کی ایگزیکٹو کمیٹی کا اجلاس 5 اگست کو جدہ میں طلب کر لیا گیا ہے۔ میڈیا رپورٹ کے مطابق ایگزیکٹو کمیٹی کے اجلاس میں مستقل مندوب کے علاوہ انسانی حقوق کے کارکن بھی شریک ہوں گے۔ او آئی سی نے میانمار کی صورتحال پر انسانی حقوق کی 20 بین الاقوامی تنظیموں کا اجلاس بھی ملائیشیا میں طلب کرنے کا فیصلہ کیا ہے۔رائٹرز کے مطابق او آئی سی نے مسلم ممالک کے عوام پر ز ور دیا ہے کہ میانمار میں ظلم و تشدد کا شکار مسلمانوں کی بھرپور امداد کریں۔ او آئی سی کے سیکرٹری جنرل اکمل الدین احسان اوگلو نے جدہ سے جاری بیان میں کہا ہے کہ میانمار میں مسلمانوں کا قتل عام سنگین انسانی بحران ہے بدقسمتی سے عالمی ادارے اور مسلمان دنیا اس سے بے خبر ہیں۔ میری مسلمان ممالک کے عوام سے اپیل ہے کہ رمضان المبارک میں اپنی امداد میانمار کے مسلمانوں کو دیں۔