آہ! وہ کِشور بھی تاریکی سے کیا معمور ہے؟

ایڈیٹر  |  فرمان اقبال

آہ! وہ کِشور بھی تاریکی سے کیا معمور ہے؟
یا محبت کی تجلی سے سراپا نور ہے؟
تم بتا دو راز جو اس گنبدِ گر داں میں ہے
موت اِک چبھتا ہوا کانٹا دلِ انساں میں ہے
(بانگِ درا)