بندگی میں گھٹ کے رہ جاتی ہے اک جوئے کم آب

ایڈیٹر  |  فرمان اقبال

بندگی میں گھٹ کے رہ جاتی ہے اک جوئے کم آب

اور آزادی میں بحر بیکراں ہے زندگی
آشکارا ہے یہ اپنی قوت تسخیر سے
گرچہ اک مٹی کے پیکر میں نہاں ہے زندگی
(بانگ درا)