تقدیرِ اُمم کیا ہے

ایڈیٹر  |  فرمان اقبال

تقدیرِ اُمم کیا ہے‘ کوئی کہہ نہیں سکتا
مومن کی فراست ہو تو کافی ہے اشارا
اخلاصِ عمل مانگ نیاگانِ کُہن سے
’شاہاں چہ عجب گر بنوازند گدا را!
(ارمغانِ حجاز)