معلوم ہیں اے مردِ ہُنر تیرے کمالات

ایڈیٹر  |  فرمان اقبال

معلوم ہیں اے مردِ ہُنر تیرے کمالات
صنعت تجھے آتی ہے پُرانی بھی نئی بھی
فطرت کو دکھایا بھی ہے‘ دیکھا بھی ہے تُو نے
آئینۂ فطرت میں دِکھا اپنی خودی بھی!
(ضربِ کلیم)