فلموں کی کمی سے انڈسٹری کو نقصان پہنچ رہا ہے: ضوریز لاشاری

فلموں کی کمی سے انڈسٹری کو نقصان پہنچ رہا ہے: ضوریز لاشاری

لاہور (سیف اللہ سپرا) پاکستان فلم ایگزبیٹرز ایسوسی ایش کے چیئرمین ضوریز لاشاری نے کہا ہے کہ پاکستان میں فلموں کی کمی ہے عید پر صرف 3 فلمیں ریلیز ہوئی ہیں اس کے بعد اب تک کوئی پاکستانی فلم نمائش کیلئے پیش نہیں کی گئی۔ فلوں کی کمی کی وجہ سے سینما انڈسٹری کو نقصان پہنچ رہا ہے۔ عید پر پاکستان کی دو فلمیں نامعلوم افراد اور آپریشن 021 لوگوں نے پسند کی ہیں۔ اس سے قبل بلال لاشاری نے ’’وار‘‘ فلم بنائی جو بہت کامیاب ہوئی۔ ضرورت اس امرکی ہے کہ زیادہ تعداد میں معیاری فلمیں بنائی جائیں۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے نمائندہ نوائے وقت سے گفتگو کے دوران کیا۔ انہوں نے مزید کہا کہ ایک زمانے میں پاکستان میں ایک ہزار کے قریب سینما گھر تھے اب صرف دو سو کے قریب فنکشنل ہیں۔ انہوں نے کہا کہ فلمسازوں اور ہدایتکاروں سے مطالبہ کیا ہے کہ زیادہ تعداد میں معیاری فلیں بنائی جائیں۔ تاکہ سینما انڈسٹری قائم رہے۔ ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا سینما مالکان نے ہمیشہ پاکستانی فلموں کو ترجیح دی ہے۔ غیر ملکی فلمیں پاکستانی فلمیں دستیاب نہ ہونے کے باعث کرتے ہیں۔ اگر پاکستان کی معیاری فلمیں مطلوبہ تعداد میں دستیاب ہوں تو ہمیں غیر ملکی فلموں پر انحصار نہ کرنا پڑے۔