سٹیج کے نامور اداکار شوکی خان کو مداحوں سے بچھڑے دس سال بیت گئے،قہقوں سے بھرپور یادیں آج بھی زندہ ہیں۔

خبریں ماخذ  |  خصوصی رپورٹر
سٹیج کے نامور اداکار شوکی خان کو مداحوں سے بچھڑے دس سال بیت گئے،قہقوں سے بھرپور یادیں آج بھی زندہ ہیں۔

سٹیج اداکارشوکی خان جنوری انیس سو اکیاون میں بلال گنج لاہورمیں پیدا ہوئے، ان کا اصل نام غیاث الدین تھا، شوکی خان نے ایف اے تک تعلیم حاصل کی اور پھر شوبز کی دنیا سے وابستہ ہوگئے ،شوکی خان نے اپنے کیرئیر کا آغاز ناہید خانم کے ڈرامے سے کیا،،شوکی خان نے کم و بیش ایک ہزار کے قریب ڈراموں میں کام کیا جن میں پانچ سو سے زائد ڈراموں میں انہوں نے نوکر کا کردار ادا کیا جو ایک منفرد اعزاز ہے،

شوکی خان کے معروف ڈراموں میں
راجا اب تو آجا،
سونے کی چڑیا،
فساد کی جڑ،
پکڑو پکڑو دلہا پکڑو،
لاڑا چوری دا،
ہساں گے ساری رات،
لوٹے زیرو میٹر،
شامل ہیں ،، انہوں نے اداکار انور علی، مستانہ اور مجاہد عباس کے ساتھ بھی کام کیا ، شوکی خان کے برجستہ اور بے ساختہ جملے آج بھی شائقین کے ذہنوں میں نقش ہیں،
لاکھوں چہروں پر مسکراہٹیں بکھیرنے والا یہ اداکار اکیس فروری 2003 کو قصور کے قریب کار حادثے میں خالق حقیقی سے جاملا، شوکی خان کے فرزند فوکی خان بھی سٹیج ڈراموں میں اداکاری کرکے والد کے فن کو زندہ رکھے ہوئے ہیں