ممبئی کی ہائی کورٹ نے سلمان خان کی درخواستِ ضمانت منظور کرتے ہوئے انھیں دی گئی پانچ سال قید کی سزا معطل کر دی

 ممبئی کی ہائی کورٹ نے  سلمان خان کی درخواستِ ضمانت منظور کرتے ہوئے انھیں دی گئی پانچ سال قید کی سزا معطل کر دی

۔ہائی کورٹ کے جج ابھے تھپسے نے یہ فیصلہ آج ضمانت کی درخواست کی سماعت کے بعد دیا۔ بدھ کے روز ممبئی کی ہی ایک سیشن کورٹ نے سلمان کو غیر ارادی قتل کے جرم میں پانچ سال کی سزا سنائی تھی،سلمان خان کو دی گئی سزا کو ان کے وکلا نے ہائی کورٹ میں چیلنج کیا تھا۔ عدالت میں سماعت کے دوران کیس کے اہم عینی شاہد پولیس کانسٹیبل رویندر پاٹل کے بیان بھی جمع کرا دی گئی،سلمان خان کا دعویٰ ہے کہ وہ حادثے کے وقت گاڑی نہیں چلا رہے تھے بلکہ ان کا ڈرائیورگاڑی چلا رہا تھا،،جج نے استغاثہ سے یہ بھی پوچھا کہ واقعے کے وقت موجود گلوکار کمال خان کا بیان پولیس نے دوبارہ کیوں نہیں ریکارڈ کیا۔سلمان خان کے وکیل امت دیسائی کی دلیل تھی کہ ’سلمان خان حادثے کے وقت گاڑی چلا رہے تھے، یہ بات جج نے کہی ہے، استغاثہ اسے ثابت نہیں کر سکا۔