فلمسازی نہ ہونے کے برابر، نگارخانے ویران ہو گئے ہیں : ثناء

فلمسازی نہ ہونے کے برابر، نگارخانے ویران ہو گئے ہیں : ثناء

لاہور (کلچرل رپورٹر) معروف ماڈل اور ٹی وی، فلم کی اداکارہ ثنا نے کہا ہے کہ میں نے اپنے فلمی کیرئیر میں ایک سو سے زائد فلمیں کی ہیں جس میں بہت سی فلمیں کامیاب ہوئی ہیں۔ میں نے پاکستان فلم انڈسٹری کا عروج دیکھا ہے۔ نگارخانوں کی رونقںی دیکھی ہیں۔ آج نگارخانے ویران ہو گئے اور فلمسازی نہ ہونے کے برابر رہ گئی ہے لیکن میں مایوس نہیں۔ امید ہے کہ ہماری انڈسٹری کو ایک بار پھر عروج ملے گا۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے نمائندہ نوائے وقت کے ساتھ گفتگو کے دوران کیا۔ انہوں نے کہا کہ میں اپنے فنی کیرئیر کا آغاز ہدایت کار سیدنور کی فلم ’’سنگم‘‘ سے کیا۔ میری دیگر مقبول فلموں میں، میں کھلاڑی تو اناڑی، بازار بند کرو، راجہ صاحب، تو چیز بڑی ہے مست مست، دشمن دا کھڑاک، دل کسی کا دوست نہیں، جیت، کالے ناگ، تو چور میں سپاہی، سہاگ، چوڑیاں، دیساں دا راجہ، انسانیت کے قاتل، جنت کی تلاش، مجھے جینے دو، سالا بگڑا جائے، بابل دا ویڑہ، پینگاں، ہم کھلاڑی پیار کے، نو پیسہ نو پرابلم، آگ کا دریا، آنسوبلا اور یہ دل آپ کا ہوا شامل ہیں۔ انہوں نے کہا ہے کہ میں کچھ ٹی وی میں کام کر رہی ہوں۔ حال ہی میں ایک فلم بھی سائن کی ہے۔ ثنا نے کہا کہ سٹیج ڈراموں میں کام نہیں کروں گی۔