ڈبل سواری اور موبائل فونز پر پابندی ناکام تجربے کو دہرانے کی ضرورت نہیں

ایڈیٹر  |  اداریہ

پنجاب کے وزیر قانون رانا ثناءاللہ نے کہا ہے کہ محرم الحرام کے دوران موٹر سائیکل کی ڈبل سواری پر پابندی اور موبائل فون سروس بند کرنے کے معاملہ کا باریک بینی سے جائزہ لے رہے ہیں۔
گذشتہ دور کے داخلہ معاملات کے سپروائزر رحمن ملک جو کبھی وزیر داخلہ بنتے تو کبھی مشیر داخلہ‘ نے دہشت گردی اور تخریب کاری کا حل ڈبل سواری اور موبائل فون پر پابندی میں تلاش کرنے کی کوشش کی وہ اس میں کامیاب تو نہ ہو سکے البتہ موٹر سائیکل اور موبائل فون استعمال کرنے والوں کو پریشانی کا سامنا ضرور کرنا پڑا۔ پنجاب حکومت ایک بار پھر اس ناکام تجربے کو دہرانے کے بارے میں سوچ رہی ہے جس کا فائدہ کم اور نقصان زیادہ ہو گا۔ ماضی کی فرسودہ روایات پر عمل کرنے کے بجائے حکومت دہشت گردی پر قابو پانے کیلئے اپنی ایجنسیوں اور قانون نافذ کرنے والے اداروں کو متحرک اور فعال کرے۔ موبائل فون سمیت مواصلات کے جدید ذرائع جرائم پیشہ عناصر کا کھوج لگانے کیلئے استعمال کئے جائیں۔ ڈبل سواری اور موبائل فونز پر پابندی کا آپشن سرے سے زیر غور نہیں لایا جانا چاہئے۔