آزاد کشمیر بھی متنازعہ بھارتی بلی تھیلے سے باہر آ گئی

آزاد کشمیر بھی متنازعہ بھارتی بلی تھیلے سے باہر آ گئی

بھارتی جنتا پارٹی کے صدر سبرامنیم سوامی نے کہا ہے کہ کشمیر کے بارے میں نامکمل ایجنڈا یہ ہے آزاد کشمیر کو واپس لیا جائے۔ ہم کشمیر کیلئے جنگ پر بھی تیار ہیں۔ جموں و کشمیر کی رائے شماری نہرو کی ذاتی رائے تھی۔ پنڈت نہرو کے دور میں بھارتی کابینہ نے رائے شماری سے متعلق کوئی فیصلہ نہیں کیا لہٰذا انکی کہی ہوئی بات کا بھارت پابند نہیں۔
بھارتی سیاستدانوں کی طرف سے اٹوٹ انگ کی رٹ تو عموماً سُننے میں آتی رہتی ہے ایسے لوگوں کی بھی بھارت میں کمی نہیں جو آزاد کشمیر کو بھی اپنا حصہ سمجھتے ہیں، جب وہ مذاکرات کی بات کرتے ہیں اسکی وضاحت بھی وہ آزاد کشمیر سمیت پورے کشمیر کو متنازعہ علاقہ قرار دے کر کرتے ہیں۔ سبرامنیم کا تازہ ترین بیان پاکستانی سیاستدانوں کیلئے لمحہ¿ فکریہ ہونا چاہئے خاص طور پر متوقع وزیراعظم میاں نواز شریف کیلئے جو یکطرفہ طور پر بھارت پر ریشہ خطمی ہوئے جا رہے ہیں۔ سبرامنیم اُسی پارٹی کے سربراہ ہیں جس کے وزیراعظم واجپائی لاہور آئے اور میاں نواز شریف انکی تشریف آوری کو مسئلہ کشمیرکے حل کی طرف اہم پیشرفت قرار دیتے ہیں۔ کشمیر کے حوالے سے بھارتی بلی کئی بار تھیلے سے باہر آئی چکی ہے تازہ ترین باہر آنے والی بلی کو میاں صاحب غور سے دیکھ لیں اور اپنی کشمیر پالیسی اسی کے مطابق تشکیل دیں۔