خادمِ پنجاب کا ویمن گارمنٹس زون بنانے کا اعلان

ایڈیٹر  |  اداریہ
خادمِ پنجاب کا ویمن گارمنٹس زون بنانے کا اعلان

وزیر اعلیٰ پنجاب میاں شہباز شریف نے کہا ہے کہ پاکستان کی 50 فیصد سے زائد آبادی خواتین پر مشتمل ہے۔ خواتین کو ترقی کے دھارے میں شامل کئے بغیر خوشحالی کا خواب پورا نہیں ہو سکتا، دوسری جانب پنجاب اسمبلی میں 48 ہزار لیڈی ہیلتھ ورکرز اور 1947 سپروائزروں کو مستقل کرنے کا بل متفقہ طور پر منظور کر لیا ہے۔
کسی بھی معاشرے کی فلاح و بہبود میں خواتین کا کلیدی کردار ہوتا ہے، وہ معاشرے میں ریڑھ کی ہڈی میں حیثیت رکھتی ہیں۔ کسی بھی معاشرے نے خواتین کی مدد کے بغیر ترقی نہیں کی۔ پاکستان کی خواتین باصلاحیت، سلیقہ مند اور سُلجھی ہوئی ہیں اور زندگی کے مختلف شعبوں میں نمایاں خدمات سرانجام دے رہی ہیں۔ سیاست، صحت، تعلیم اور کھیلوں کے میدان میں خواتین اپنی صلاحیتوں کا لوہا منوا چکی ہیں لیکن پاکستان کو ترقی یافتہ ممالک کی صف میں کھڑے ہونے کیلئے ابھی مزید ترقی کی ضرورت ہے، خواتین کو اس سلسلے میں میدان میں آنا ہو گا۔ گزشتہ روز خادمِ پنجاب نے سائوتھ ایشیا ویمن کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے خواتین کو مزید سہولیات فراہم کرنے کا اعلان کیا ہے۔ وزیراعظم پاکستان نے سمال بزنس لون پروگرام میں پہلے ہی خواتین کیلئے 50 فیصد کوٹہ مقرر کیا ہے۔ اب خادمِ پنجاب نے ویمن گارمنٹس زون بنانے کا بھی اعلان کیا ہے جس سے خواتین کو مزید حوصلہ افزائی ملے گی۔ پنجاب اسمبلی نے 48 ہزار لیڈی ہیلتھ ورکرز اور 1947 سپروائزروں کو مستقل کرنے کا اعلان کیا ہے جو خوش آئند ہے ہر شعبے میں خواتین کیلئے کوٹہ مقرر کیا جائے۔