دفاع پاکستان کونسل کا کاررواں

 دفاع پاکستان کونسل کا کاررواں


 دفاع پاکستان کونسل کے زیر اہتمام دفاع پاکستان کاررواں میں ہزاروں افراد کی شرکت، اہلسنت و الجماعت ،جماعت اسلامی ،جماعت الدعوة اور جے یو آئی (س) کے رہنماﺅں نے حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ بھارت کو پسندیدہ ملک قرار دینے پر ریفرنڈم کرایاجائے۔ مذہبی جماعتوں پر مشتمل اتحاد دفاع پاکستان کونسل نے گزشتہ روز ہزاروں افراد کے ہمراہ لاہور سے واہگہ بارڈر تک دفاع پاکستان کاررواں چلا کر حکومت کے اس فیصلے کیخلاف اظہار قوت کا مظاہرہ کیا۔ عام پاکستانی بھی اس فیصلے کو کوتاہی قرار دیتی ہے۔بھارت ایک طرف کشمیریوں کی نسل کشی کر رہا ہے تو دوسری طرف ہماری حکومت اسے پسندیدہ ملک قرار دے رہی ہے۔دفاع پاکستان کونسل کے رہنماﺅں کا یہ مطالبہ درست ہے کہ بھارت کو پسندیدہ قرار دینے کے مسئلے پر قومی ریفرنڈم کروالیاجائے۔قوم کا جو بھی فیصلہ ہوگا حکومت اور مذہبی جماعتیں اسے تسلیم کریں گی۔ حکومت کو عوامی رائے ضرور لینی چاہئے اس سے بہت سارے مسائل حل ہوجائینگے۔گزشتہ روزکے کاررواں میں مولانا سمیع الحق،حافظ سعید، مولینا احمد لدھیانوی، حمید گل، شیخ رشید،سراج الحق اور دیگر رہنماﺅں کے ساتھ ہزاروں عوام نے واہگہ بارڈر پر اپنا موقف دیا ہے کہ حکومت پاکستان بھارت کے متعلق اپنا موقف تبدیل کرے لہٰذا حکومت کو اس بارے قومی ریفرنڈ م کرواناچاہئے تاکہ بھارت کیساتھ تعلقات قومی امنگوں کے مطابق ہی استوار کیے جائیں۔